مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک اور صحافی ہلاک
پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک اور صحافی ہلاک ہو گیا ہے۔ ہلاک کیے جانے والے صحافی افضل خواجہ کا تعلق ضلع جعفر آباد کے علاقے اوستہ محمد سے تھا۔ اوستہ محمد پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ افضل خواجہ بلوچستان سے متصل سندھ کے شہر جیکب آباد سے ایک گاڑی میں واپس اوستہ محمد آ رہے تھے کہ انہیں کیٹل فارم کے علاقے میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے گاڑی کے ڈرائیور سمیت ہلاک کر دیا۔پولیس اہلکار نے بتایا کہ جائے وقوعہ سے ملنے والے شواہد کے مطابق صحافی کو ہلاک کرنے کے لیے تین اطراف سے فائرنگ کی گئی۔اہلکار کا کہنا تھا کہ صحافی کو ہلاک کرنے کے محرکات معلوم نہیں ہوسکے لیکن ابتدائی شواہد سے معلوم ہوتا ہے کہ انہیں ہدف بناکر قتل کیا گیا ہے۔پولیس نے صحافی اور گاڑی کے ڈرائیور کی ہلاکت کا مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کر کے تفتیش شروع کردی ہے۔افضل خواجہ بلوچستان میں رواں سال ہلا ک کیے جانے والے پہلے صحافی ہیں۔ بلوچستان 2007 سے صحافیوں کے لیے ایک خطرناک علاقہ بن چکا ہے۔ اب تک بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بڑی تعداد میں صحافیوں کو ہدف بنا کر قتل کیا گیا ہے۔