مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کشمیریوں کو اسوقت تک حمایت حاصل رہے گی جب تک وہ اپنا حق پا نہیں لیتے: جیری سٹکلف
بریڈفورڈ ... دنیا بھر میں کشمیری بھارت کے یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر مناتے ہیں۔ اسی سلسلہ میں بریڈفورڈ میں ہونے والی ایک تقریب میں بریڈفورڈ ساؤتھ کے رکن پارلیمنٹ جیری سٹکلف نے جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت کیلئے شروع کی جانے والی دستخطی مہم میں شامل ہوتے ہوئے اعلان کیا کہ وہ کشمیریوں کے اس بنیادی حق کیلئے اپنی آواز بلند کرتے رہیں گے۔ اس تقریب کی صدارت قونسلر شاہ محمد کھوکھر نے کی جبکہ اس سے جیری سٹکلف کے علاوہ بریڈفورڈ کونسل کے ڈپٹی لیڈر کونسلر عمران حسین، یارکشائر اورہمبرسائیڈ کیلئے لیبر پارٹی کے متوقع یورپین پارلیمنٹ کے امیدوار کونسلر اصغر قریشی اور تحریک کی شہناز صدیق خطاب کیا جبکہ نظامت کے فرائض تحریک حق خودارادیت کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے انجام دیئے، مقررین نے بھارت کے ایک جمہوری ملک ہونے کے دعوی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جس ملک نے اپنی افواج کے زریعہ ایک کروڑ سے زائد انسانوں کے حقوق سلب کررکھے ہوں، جگہ جگہ پہرے لگا کر نوجوانوں کو قتل کیا جاتاہو اس ملک کو خود کوجمہوری کہلوانے پر شرم آنی چاہئے۔ رکن پارلیمنٹ جیری سٹکلف نے کہا کہ بریٖڈفورڈ ایک ملٹی کلچرل شہر ہے جہاں دنیا کے مختلف حصوں سے آنے والے آباد ہیں اوریہی وجہ ہے کہ دنیا میں جہاں کہیں بھی کوئی اچھا برا ہو اس کا اثر ہماری کمیونٹی پر ہی پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ شروع دن سے کشمیریوں کے اس حق کے حصول کیلئے ان کے حامی رہے ہیں اور کشمیریوں کو اسوقت تک ان کی یہ حمایت حاصل رہے گی جب تک کہ وہ اپنا یہ حق پا نہیں لیتے، جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت کی طرف سے چلائے جانے والی دستخطی مہم پر جیری سٹکلف کے دستخط کرنے سے بریڈفورڈ کے تمام اراکین پارلیمنٹ اس مہم کا حصہ بن گئے ہیں۔ 5فروری تک ایک لاکھ افراد کے دستخطوں سے پیش کی جانے والی اس پٹیشن پر اب تک 20اراکین پارلیمنٹ دستخط کرچکے ہیں جبکہ کوشش کی جارہی ہے کہ 5فروری تک اس پر زیادہ سے زیادہ اراکین پارلیمنٹ کے دستخط حاصل کئے جاسکیں۔ تحریک کی شہناز صدیق نے گزشتہ دنوں رادھرم کی رکن پارلیمنٹ سارہ چمپئن سے ملاقات کرکے نہ صرف یہ کہ ان سے پٹیشن پر دستخط لئے بلکہ اس موقع پر ساؤتھ یارکشائر کے پولیس کمشنر سے بھی اس پٹیشن پر دستخط لیتے ہوئے انہیں تحریک کے مستقبل کے پروگراموں میںشرکت پر آمادہ کیا۔ بریڈفورڈ سے شروع کی جانے والی یہ مہم اب بولٹن، مانچسٹر، لیڈز اورشفیلڈ سے ہوتی ہوئی نوٹنگھم پہنچی ہے جبکہ اگلے مرحلہ میں ویسٹ مڈلینڈ اور لوٹن اور بیڈفورڈ شائر سے زیادہ سے زیادہ حمایت لئے جانے کی کوشش کی جائیگی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے بریڈفورڈ ویسٹ کے انجہانی رکن پارلیمنٹ مارشا سنگھ کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ تحریک حق خودارادیت کو اس طرح منظم کرنے کا اچھوتا خیال مارشاسنگھ کا تھا اورانہوں نے مجھے اس امر پرآمادہ کیا۔بریڈفورڈ کونسل کے ڈپٹی لیڈر کونسلر عمران حسین نے کہاکہ کشمیر کشمیریوں کا ہے اوروہی اس کے مستقبل کا فیصلہ کرنے کے مجاذ ہیں۔