مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
یوکے آئی پی اور بی این پی برطانوی معاشرے میں تقسیم اور نفرت پھیلا رہی ہیں: سجاد کریم
بر نلے ... مسلمانوں میں ایک قلیل تعداد کا کردار و عمل اسلام فوبیا پیدا کرنے کا سبب ہے، عراق جنگ کے وقت مظاہرے کرنے والوں میں مقامی غیر مسلم کمیونٹی بھی پیش پیش تھی اس وقت اسلام فوبیا جیسی وبا نہ ہونے کے برابرتھی۔ مسلمانوں کا برٹش سو سائٹی میں عدم انضمام کابھی اسلام دشمنی کے جذبات ابھارنے میں بڑا کردار ہے۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے کمیونٹی آرگنائزیشنز فورم اور برنلے انیڈ پینڈل فرینڈز لیگ کے زیر اہتمام سیمینار بعنوان ’’ مائنارٹی کمیونٹی اینڈ اسلام فوبیا‘‘میں کیا جس میں ایک کثیر تعداد میں پاکستانی اور بنگلہ دیشی کمیونٹی نے شرکت کی مقررین نے اظہار خیال کرتے ہوئے اسلام فوبیا کے اسباب وعلل پر روشنی ڈالی۔ خصوصی مہمانوں میں پاکستان قونصلیٹ جنرل آفس مانچسٹر سے کمیونٹی ویلفئیر قونصلر ساجد قاضی نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ عراق جنگ کے خلاف لند ن کے ملین مارچ میں ہمارے ساتھ اکثریت انگریز افراد کی تھی نوے فیصد یقیناً غیر مسلم تھے لیکن عراق وار کے خلا ف آواز اٹھا نے میں وہ ہمارے ساتھ تھے اگرچہ اس وقت کے وزیر اعظم بر طانیہ نے ملین مارچ کو ہنسی میں اڑا دیا کہ ایک ملین لوگ تو مارچ میں شاید تھے لیکن کئی ملین جو شامل نہیں وہ جنگ کے حق میں ہیں اور پھر ڈوسئیر جاری کیا کہ عراق میں تباہ کن ہتھیار موجود ہیں جو بعد میں غلط بھی ثابت ہؤاانہوں نے کہا جھے اس وقت کسی اسلام فوبیا کا حساس نہیں ہؤا ۔امریکہ میں ٹوین ٹاورز اور پھر برطانیہ میں سیون سیون جیسے واقعات بھی ہوئے سلام فوبیا کا کبھی اس حوالے سے ذکر نہیں آیا انہوں نے کہا باایں طور ہمیں غور کرنا ہوگا کہ اسلام فوبیا کا عفریت کیوں و کہاں پرورش پار رہا ہے؟پاکستان کے نناوے فیصد لوگ امن و دین پسند ہیں دوسروں کے لئے قربانی کے جذبات رکھتے ہیں انہوں نے کہا کہ ہمیں ان لوگوں کا ساتھ دینا ہوگا جو امن کو پسند کرتے ہیں دوسروں کو بھی جینے کا حق دیتے ہیں اس سوال پر کہ ہماری تقریبات میں خواتین کی شرکت نہیں ہوتی انہوں نے کہا کہ عورتیں بھی اس معاشرے کا اہم حصہ ہیں اور ان کی شرکت یقینی بنانی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح ہر کمیونٹی نے باہمی اتحاد سے نسل پرستوں کو برنلے سے نکالا دیا ہے اب آپ امن و آشتی کے فروغ کے لئے خود کو اولین صفوں میں شامل کریں اور اس کام کی ابتداء بر نلے سے کریں۔ ممبر یورپین پارلیمنٹ ڈاکٹر سجاد کریم نے اس موضوع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اسلام فوبیا کے ساتھ ساتھ لوگوں میں یورو فوبیا ، سکاٹ لینڈ فوبیا بھی ہوگیا ہے انہوں نے حسب معمول یوکے انڈیپنڈنٹ پارٹی اور بی این پی کو ایک ساتھ ہی رگیدتے ہوئے کہا کہ یہ پارٹیاں تقسیم و نفرت کا پیغام پھیلا رہی ہیں ان کا انسداد ہم سب کے لئے ضروری ہے سجاد کریم نے بر طانیہ ،یورپ اور دیگر ممالک سے دہشت گردی کے شبہ میں گرفتار افراد کی سی آئی اے کو حوالگی سے پہلے یورپی یونین کے مختلف مقامات پر بند رکھا جاتا تھا 2007 ء میں انسانی حقوق کی تنظیم نے ان گرفتار مشتبہ افراد پر مبینہ تشدد کی رپورٹس پرتشویش کا اظہار کیا سجاد کریم واحد اور پہلے ایم ای پی تھے کہ یورپی پارلیمنٹ میں انہوں نے اس کے خلاف آوا زٹھائی کہ دہشت گردوں کا قلع قمع ضروری ہے لیکن گرفتار افراد پر مبینہ تشدد یورپ اور بر طانیہ کی جیلوں میں ناقابل برداشت ہے اور انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے مترادف ہے انہوں نے کہا کہ اس وقت یورپی پالیمنٹ کی صدارت برطانیہ کے پاس تھی اس وقت کے صدر نے میری اس بات کی ہنسی اڑائی تھی جبکہ وقت نے اسے سچ ثابت کیا اور آج اٹلی کی عدالتوں میں سی آئی اے کے مبینہ تشدد میں ملوث اہلکاروں پر مقدمات قائم ہیں انہوں نے کہا کہ میڈیا کا کچھ حصہ بھی اسلام فوبیابڑھانے میں نسل پرستوں سے پیچھے نہیں۔رکن یورپی پارلیمنٹ کر ڈیوس نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ شائد کچھ لوگوں کو میری باتیں پسند نہ آئیں لیکن مجھے کہنی ہیں کہ کئی سالوں سے میں دیکھ رہا ہوں کہ سوسائٹی کا حصہ ہونے کے باوجودکسی تقریب میں خواتین نہیں ہوتیں انہوں نے کہا کہ معاشرے میں ہر قسم کے لوگ موجود ہوتے ہیں کوئی مذہبی ہے کوئی مذہب سے لین دین نہیں رکھتاوہ ضروری نہیں کہ اسلام ہو پھر بھی اسلام فوبیا اپنی جگہ میں نے برسلز میں ایک گرجا گھر کی عمارت کو آتش زنی سے پہنچایا گیا نقصان دیکھا نقصان پہچانے والے بھی اسی مذہب کے تھے لیکن اس فرقے سے انہیں شدید اختلاف تھا انہوں نے عمارت ہی جلا ڈالی کچھ ایک طرح کے عیسائی ہیں کچھ دوسری طرح کے اسی طرح مسلمانوں میں صورت حال ہے ۔ میں نے بدھ راہب مسلمانوں پر تشدد کرتے اور قتل کرتے دیکھے ہیں انہوں نے کہا کہ یورپی پارلیمنٹ میں چوبیس زبانیں بولی جاتی ہیں انگریزی کا امتیاز ہے دنیا بھر کی انگریزی ایک مشترکہ زبان ہے لیکن دوسری زبانوں کی اہمیت کو کم نہیں کیا گیا۔انہوں نے اپنا کہا کہ وہ ان کا نام ویلش ہے ان کا آبائی علاقہ بھی ویلز ہے لیکن وہ ایک لفظ تک اس زبان کا نہیں جانتے۔دراصل ہمیں چاہیئے کہ مل جل کر رہنے کے لئے معاشرے میں پائی جانے والی رکاوٹوں کو ہٹائیں اور یہ فوبیا وغیرہ نہیں رہے گا ۔برنلے کے ایم پی گورڈن برٹوسل نے جرمنی میںیہودیوں سے ہونے والے نارواسلوک اور کروڑوں کااتلاف جان کی مثال سے کہا کہ اسلام فوبیابھی اسی سوچ کی عکاسی ہے کہ یہودیوں کے جرمنی میں رہنے کے حق سے انکار تھااور ان اس حق کو چھیننے کے لئے تشدد کا راستہ اختیار کیا گیا چند سال پہلے برنلے میں بی این پی کے منتخب کونسلروں کی تعداد چھ ہوگئی تھی اب ایک بھی نہیں انہوں نے برنلے کی تمام کمیونٹیوں کی تعریف کرتے ہوئے کہ کہ اتفا ق و اتحاد سے اس نسل پرست اور نفرت کا بیج بو نے والی پارٹی کی بیخ کنی کر دی گئی۔ اسی طرح ہمیں مل جل کر اس فوبیا کا بھی انسداد کرنا ہے برنلے میں تعمیر و ترقی کے حوالے سے اپنے کئے گئے کاموں سے کمونٹی کو آگا ہ کیا۔پینڈل کے ایم پی اینڈریو سٹیفنسن نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہاسلام اور عیسائیت میں کئی مشترکہ اقدار ہیں اسلام امن کا دین ہے بھائی چارے کا درس دیتا ہے پینڈل میں کچھ اسکول انہوں نے خصوصاً مارزڈن ہائٹس اسکول کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ سوسائیٹی میں نفرت کو ختم کرنے میں کوشاں ہیں ہمیں دراصل تعصب سے لڑنا ہے تاکہ وہ ختم ہو اسلام فوبیا خود بخود ختم ہو جائے گا انہوں نے کہا کہ درحقیقت ذرائع ابلاغ کا یک معتدبہ حصہ مذہب مخالف رجحان رکھتا ہے۔ برطانیہ میں بسنے والا ہر باشندہ برطانوی ہے ہمیں ایسی فضا کو فروغ دینا چاہیئے جس میں مل جل کر رہنے کا احساس اجاگر ہوانہوں نے سجاد کریم کو اپنا مینٹور قرار دیتے ہوئے کہا کہ میں نے ان سے بہت سیکھا ہے انہوں فرینڈز آف پاکستان گروپ کے چئیر مین ہونے کواپنے لئے اعزاز قرار دیا اور اپنے دورہ پاکستان اور بنگلہ دیش کا ذکر بھی کیا روزنامہ جنگ وجیو کے بیورو چیف علامہ عظیم جی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم ہمیشہ رونا پیٹتے ہیں کہ مغرب اسلام کے خلاف پرپیگنڈہ کرتا ہے ہمیں اپنے گریبان میں جھانک کر دیکھنا چاہیئے کہ ہم کیا ہیں ؟کوئی بنگالی مسلمان ہے تو کوئی پنجابی ۔ ہم ٹکڑیوں میں بٹے ہوئے ہیں اتحاد و اتفاق کا فقدان ہے اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کریں انہوں نے دہشت گردی کے حوالے سے کہا کہ یہ ہمارا دین خلفاء راشدین کا دین ہے محبان اہل بیت کا دین ہے خارجیوں والا دین نہیں۔ تقریب میں موجود ممبر یورپی پارلیمنٹ اور ممبر پارلیمنٹ و دیگر معروف لوگوں کو بی سی او ایف کی جانب سے کمیونٹی کی خدمات کے ضمن میں ایوارڈ بھی دیئے گئے۔ بر نلے پینڈل فرینڈز لیگ کے چئیر مین حاجی سغیر احمد ، اسرار الدین ، عبد المالک ، آفتاب الرحمٰن نے بھی خطاب کیا حافظ اشبر الرحمٰن نے تلاوت اورفیضان فیصل فیضان نے ہدیہ نعت پیش کیا قاری محمد شیر اورفادر ہاپ وُڈ سٹرکلینڈنے دعا کرائی۔ برنلے کمیونٹی آرگنائزیشنز فورم کے چئیر مین میاں عبد الحمیدنے صدارت تنظیم کے جنرل سکریٹری مذکر علی نے سٹیج سکریٹری کے فرائض انجام دئیے-(بیورو رپورٹ:فیاض بشیر)