مقبول خبریں
الیکشن 2019 کیلئے کنگزوے وارڈ راچڈیل سے لیبر پارٹی کی مس ایلس رائٹ نامزد
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آئرلین مکارتھی ایم ای پی کی آیئندہ انتخابات سے دستبرداری، لیبر اور ٹوری کے متضاد دعوے !!
مانچسٹر ... نارتھ ویسٹ سے لیبر پارٹی کی امیدوار یورپین پارلیمنٹ آئرلین مکارتھی نے مئی میں ہونے والے انتخابات کیلئے اچانک ریٹائرمنٹ پر تشویش پیدا کر دی ہے۔ علاقے کے اکثریتی اور اقلیتی ووٹرز ان کے اس فیصلے پر حیران اور پریشان ہیں۔ جبکہ انکے حامی اور مخالفین اس فیصلے کو اپنے اپنے حق میں لانے کیلئے سرگرم عمل ہوگئے ہیں۔ لیبر پارٹی کی حمائت کرتے ہوئے مقامی میڈیا میں تاثر دیا گیا ہے کہ "ان کی جگہ اب مانچسٹر کے پہلے نو عمر مسلمان پاکستانی سابق لارڈ میئر کونسلر افضل خان کے سال رواں میں یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں واضح کامیابی کے روشن امکانات پیدا ہو چکے ہیں اس سلسلے میں کونسلر افضل خان نے کہا کہ آرلین مکارتھی بہترین ایم ای پی تھیں ان سے میں نے بہت کچھ سیکھا ہے میں بھی کامیاب ہو کر نارتھ ویسٹ کی تمام کمیونٹیز کی بلا امتیاز خدمت کروں گا اوریہ بھی کوشش کروں گا کہ پاکستان کا نام بلند کر سکوں اور خاص طور ر جی ایس پلس پاکستان کے لئے کارآمد بنانے اور زیادہ سے زیادہ پاکستان کو فائدہ پہنچانے کی کوشش کروں گا"۔ جبکہ مخالف جماعت ٹوری پارٹی کے دھڑے کا اس سلسلے میں کہنا ہے کہ "سیاسی حلقوں میں اس خبر کو بڑی سنجیدگی سے لیا جارہا ہے کہ سلیکشن پروسیس سے گزر کر لیبر پارٹی کی آٹھ امیدواروں کی یورپین ٹیم میں پہلے نمبرپر موجود ایم ای پی کو اچانک کن عوامل نے اتنا بڑا فیصلہ کرنے پر مجبور کیا ہے؟آئرلین مکارتھی پہلی بار 1994 میں رکن یورپی پارلیمنٹ منتخب ہوئی تھیں 1999 میں حلقہ بندیوں کی وجہ سے وہ نارتھ ویسٹ سے دوسری بار ممبر یورپی پارلیمنٹ منتخب ہوئیں اس طرح وہ اب تک چار مرتبہ ایم ای پی منتخب ہو چکی ہیں اپنے دور میں کئی اعلیٰ ذمہ داریاں نبھا چکی ہیں۔ان کے اس اچانک فیصلے سے مئی 2014 کو نارتھ ویسٹ کے یورپین الیکشنز پر ایشیائی کمیونٹی کے حوالے سے کچھ مثبت اثرات مرتب ہونے ناگزیر ہو گئے ہیں." لیبر اور ٹوری دونوں پارٹیوں کے مسلم امیدواروں کا کہنا ہے کہ وہ انتہا پسند جماعت بی این پی کے خلاف ہیں، اس حوالے سے اب دیکھنا یہ ہے کہ دونوں بی این پی کے زیادہ خلاف ہیں یا ایک دوسرے کے۔