مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں جوان اولاد کا والدین کے ہمراہ رہنے کی شرح میں اضافہ، قومی ادارے کی رپورٹ
لندن ... برطانیہ میں دنیا کے دیگر ترقی یافتہ ممالک کے برعکس جوان بچوں کی اپنے ماں باپ کے ہمراہ رہنے کی شرح میں اضافہ دیکھنے کو آیا ہے۔ برطانوی دارالحکومت لندن میں سب سے کم جوان مرد یعنی 22 فیصد اپنے والدین کے ساتھ رہتے ہیں، جب کہ شمالی آئرلینڈ میں 36 فیصد اور اس کے بعد مڈلینڈز میں 29 فیصد اپنے خاندان کے ساتھ رہتے ہیں۔ یہ اعداد و شمار برطانوی شماریاتی ادارے کی طرف سے جاری کئے گئے ہیں جن کے مطابق ملک کے ایک چوتھائی جوان افراد اپنے والدین کے ساتھ رہائش پذیر ہیں۔ سروے کے مطابق 2013 میں 20 سال سے 34 سال کی عمر کے 33 لاکھ افراد اپنے والدین کے گھروں میں مقیم تھے۔ 1996 کے دستیاب اعداد و شمار کے مطابق اسی عمر کے 27 لاکھ افراد والدین کے ساتھ رہائش پذیر تھے اور یہ شرح اس وقت 21 فیصد بنتی تھی۔ سروے کے مطابق شمالی آئرلینڈ کے رقبے کی وجہ سے برطانیہ کے دیگر علاقوں کی مقابلے میں یہ زیادہ آسان ہے کہ لوگ نوکری یا یونیورسٹی گاڑی پر جائیں اور والدین کے ساتھ رہیں۔2013 میں 20 سال کی عمر کے 65 فیصد مرد اور 52 فیصد خواتین اپنے گھروں میں رہتے تھے۔ 34 سال کی عمر میں اس شرح میں کمی آئی ہے اور آٹھ فیصد مرد اور تین فیصد خواتین اپنے والدین کے ساتھ رہائش پذیر تھے۔ او این ایس کے مطابق حالیہ معاشی بحران والدین کے ساتھ رہنے کے رجحان میں اضافے کا سبب ہو سکتا ہے۔