مقبول خبریں
آشٹن گروپ کی جانب سے پوٹھواری شعر و شاعری کی محفل،شعرا نے خوب داد وصول کی
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سجاد کریم عوامی نمائندے ہیں انہیں جو اعزاز بھی ملا عوام کی نمائندگی پر ملا: انڈریو اسٹیفن سن
نیلسن ... برنلے ، نیلسن ، پینڈل ، برائر فیلڈ اور نواحی علاقوں کی پاکستانی وکشمیری کمیونٹی نے آئندہ مئی میں ہونے والے یورپی انتخابات میں ٹوری پارٹی کے امیدوار ڈاکٹر سجاد حیدر کریم ایم ای پی کی ایک دفعہ پھر بھرپور حمائت کا اعلان کیا ہے ۔ اس عزم کا اظہار برنلے اینڈ پینڈل فرینڈز لیگ کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے ایک جلسہ میں کیا گیا جس کی صدارت ممتاز سیاسی وکمیونٹی راہنما میاں عبدالحمید نے کی جبکہ نظامت کے فرائض صغیر احمد نے سرانجام دئے ۔یادرہے کہ یہ وہ علاقہ ہے جہاں سے سجاد کریم نے اپنے سیاسی سفر کا آغاز ایک کونسلر کی حیثیت سے کیا تھاا ور دومرتبہ کونسلر منتخب ہوئے بعد ازاں دو دفعہ یورپی پارلیمنٹ کے رکن منتخب ہوئے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر سجاد کریم نے کمیونٹی کی حمائت کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ انہوں نے جو کچھ بھی کیا ہے وہ عوام کے اعتماد اور قوت کے باعث کیا ہے ۔حتیٰ کہ انہیں ڈاکٹریٹ کی جو ڈگری دی گئی ہے وہ دراصل نارتھ ویسٹ انگلینڈ کے عوام کا اعزاز ہے جن کی وہ نمائندگی کرتے ہیں اورانہیں جو بھی مقام ملا ہے وہ نارتھ ویسٹ کے عوام کی نمائندگی کرنے پر ہی ملا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ دلوانے بنگلہ دیش ، ترکی ، پاکستان اور دیگر اسلامی ممالک کی حمائت سمیت انہوں نے جتنے بھی کام کئے ہیں وہ برطانیہ کے وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون اور کنزرویٹو پارٹی کی تائید اور حمائت کے بغیرمکمل نہیں ہو سکتے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ برادر اسلامی ملک ترکی کو یورپی یونین کی مکمل رکنیت دلانے کے لئے ان کی کوششیں جاری رہیں گی اور انشاء وہ جلد ہی یہ ہدف حاصل کر لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نارتھ ویسٹ میں لیبر پارٹی یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں بی این پی اور یوکے آئی پی سے بھی بڑھ کر منفی رویے پیدا کر رہی ہے اور عوام کو ان کے اس پروپیگنڈے سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے کہ سجاد کریم عوام کے ووٹوں کے بغیر بھی منتخب ہو سکتے ہیں حالانکہ کوئی بھی نمائندہ عوام کے ووٹوں کے بغیر جیت ہی نہیں سکتا ۔ مجھے ماضی میں بھی عوام کے ووٹوں نے کامیاب بنایا ہے اور میں آئندہ بھی خود کو عوام کے ووٹوں کا مستحق سمجھتا ہوں ۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ پاکستان کے لئے جی ایس پی پلس کا درجہ ہم 2005 ء میں بھی حاصل کر سکتے تھے لیکن اس وقت پیٹر مینڈلسن یورپ کے ٹریڈ کمشنر تھے جن کا تعلق لیبر پارٹی سے ہے اور انہوں نے کھل کر پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ دینے کی مخالفت کی تھی یہ سب یورپی پارلیمنٹ کی ویب سائٹ کے ریکارڈ پر موجود ہے عوام اس کو خوددیکھ سکتے ہیں۔سجاد کریم نے کشمیر کے حوالے سے مختلف حلقوں کی جانب سے دعاوی پر اظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ جب وہ برائرفیلڈ سے کونسلر منتخب ہوئے تو انہوں نے دوسرے ہم خیال کونسلروں کے ساتھ مل کر کشمیر کی حمائت کے لئے پینڈل بروکونسل کے اندر آل پارٹیز کشمیرورکنگ گروپ کے قیام کی کوششیں کیں لیکن اس وقت لیبر پارٹی کے ایک ایشیائی کونسلر نے اپنی پارٹی کے لیڈروں کی ہدایت پر اس گروپ کی تشکیل کی مخالفت کی بلکہ دوسرے کونسلروں کو بھی گمراہ کرنے کی ناکام کوشش کی تھی۔ آج وہی شخص کس منہ سے کشمیر کے نام پر لوگوں سے ووٹ مانگ رہا ہے ۔ آج پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کی ہمدردی کا راگ الاپنے والی لیبر پارٹی کے پاس اس کاکیا جواز ہے؟ انہوں نے کہا کہ ایماء نکلسن کی کشمیر رپورٹ کو میں نے پہلے دن ہی رد کردیا تھا کیونکہ اس میں موجود نکات حقائق کے منافی تھے ۔ مجھے اس وقت اس رپورٹ کی مخالفت میں سخت ذہنی کوفت دی گئی لیکن میں نے عوام کے اعتماد کا لحاظ رکھتے ہوئے اس رپورٹ کی سخت مخالفت کی اور اس میں 162 ترامیم کروائیں انہوں نے زور دے کر کہا کہ کشمیر کے نام پر کشمیریوں کے مسترد کئے ہوئے کچھ لوگ یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں عوام کو گمراہ کرنے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں عوام کو ان کی چالوں اور ان کے ماضی کے منفی اور گھناؤنے کردار سے ہوشیار رہنا چاہئیے اور ان کی چالوں میں نہیں آنا چاہئیے ۔ انہوں نے مانچسٹر سٹی کونسل میں کنزرویٹو پارٹی کے سابق کونسلر فراز بھٹی کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا نیز انہوں نے نیلسن کے کونسلر عبدالعزیز کو کنزرویٹو پارٹی میں شامل ہونے پر خوش آمدید کہتے ہوئے واضح کیا کہ کونسلر عبدالعزیز ہماری کمیونٹی کا سرمایہ ہیں جن کی کمیونٹی کے لئے خدمات کسی تعارف کی محتاج نہیں اور میں امید کرتا ہوں کہ وہ آئندہ بھی کمیونٹی کی اسی طرح خدمت کریں گے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نیلسن سے پارلیمنٹ کے رکن اینڈریو سٹیفنسن نے زور دیا کہ 22 مئی کو ہونے والے یورپی انتخابات بہت اہم ہیں اور عوام کو زیادہ سے زیادہ تعداد میں ووٹ دے کر نہ صرف سجاد کریم کوبھاری اکثریت سے کامیاب بنانا چاہئیے بلکہ بی این پی کو بھی ہمیشہ کے لئے شکست سے دوچار کردینا چاہئیے ۔ انہوں نے کہا کہ کونسلر عبدالعزیز کا کنزرویٹو پارٹی میں شامل ہونا بہت اہم ہے کیونکہ یہ ان کے شامل ہونے سے کنزرویٹو پارٹی مضبوط ہوئی ہے پچھلے چند ہفتوں سے کونسلر عزیز کو جس ذہنی کوفت سے ان کے سابقہ ساتھیوں نے گزارا ہے مجھے اس پر انتہائی دکھ ہؤا ہے اور پارٹی کے ساتھ ہم سب کونسلر عبد العزیز کے ساتھ چٹان کی طرح کھڑے ہیں انہوں نے کہا کہ سجاد کریم کی حمائت ہی سے برطانوی پارلیمنٹ کے اندر فرینڈز آف پاکستان گروپ تشکیل پایا ہے ہم پاکستان کی ٹریڈ کو فروغ دینے کی کوشش کر رہے ہیں درحقیقت ماضی کی نسبت اس حکومت کے دور میں پاکستان اور برطانیہ کے مابین تجارت میں بے حد اضافہ ہؤا ہے اور امداد بھی بڑھائی گئی ہے ۔موجودہ حکومت کے دور میں برطانوی معشیت میں بہتری کی رپورٹس کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ ہم لوگوں کو کام پر دوبارہ جانے کے لئے حالات سازگار بنا رہے ہیں ہم چاہتے ہیں کہ لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ملازمتیں دی جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں لیبر پارٹی نے اپنے دور اقتدار میں این ایچ ایس میں اس قدر کٹوتیاں کیں کہ نیلسن اوربرنلے میں ہسپتالوں کے کئی شعبے بند ہو گئے ۔ اب ہم نے صحت کی مد میں نو ملین پونڈ حاصل کئے ہیں جس سے برنلے جنرل ہسپتال میں سٹاف میں اضافے کے ساتھ دیگر سروسز بھی فراہم کی جائیں گی ۔ کنزرویٹو پارٹی نے عوام کی ضروریات کو مد نظر رکھتے ہوئے پینڈل میں سکولوں کے لئے سات ملین پونڈ کی گرانٹ دی ہے اور دو سکول نیلسن میں کئی ملین سے زیر تعمیر ہیں۔ ہماری حکومت نے پینڈل بالخصوص نیلسن میں سینکڑو ں بند مکانات کو دوبارہ قابل رہائش بنانے کے لئے کئی ملین پونڈز انویسٹ کئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وہ مقتول یوسف کے خاندان کو پاکستان میں انصاف دلا کر رہیں گے اور اس مقصد کے لئے انہوں نے اسلام آباد میں برطانوی ہائی کمشنر کے ساتھ مکمل رابطہ رکھا ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سجاد کریم کی کامیابیاں میرے لئے بھی خوشی کا باعث ہیں اورہمیں آئندہ یورپی انتخابات میں انہیں بھاری اکثریت سے کامیاب بنوانا ہے ۔ ممتاز صحافی محبوب الٰہی بٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج مانچسٹر میں میلاد النبیؐ کے جلوس کے موقع پر جو سیاست کھیلی گئی نیز ایک سیاستدان کی طرف سے وہاں جو غیر اخلاقی اور غیر شرعی زبان استعمال کی گئی میں اس کی شدید مذمت کرتا ہوں اور جلوس کی انتظامیہ کو انتباہ کرتا ہوں کے میلادالنبی ؐ کے نام پر سیاست بند کی جائے نیز سیاستدانوں کو یہ موقع نہ دیا جائے کہ وہ میلاد کی متبرک محفلوں میں آ کر اپنے منفی مقاصد حاصل کریں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ تحریک آزادی کشمیر کے نام پر بھی یورپی یونین کے انتخابات کی مہم منفی انداز میں چلائی جا رہی ہے ۔میں ان کو متنبہ کرنا چاہتا ہوں کہ کشمیر اخباروں میں فوٹو لگوانے سے نہیں آزاد ہوگا بلکہ اس کے لئے وہی کچھ کرنا ہو گا جو سجاد کریم نے یورپی پارلیمنٹ کے اندر جا کر کیا ارکان پارلیمنٹ کے ساتھ تصاویر بنوا کر کشمیر کے نام پر سیاست کرنے والے یہ بتائیں کہ انہوں نے کس پلیٹ فارم یا کس پارلیمنٹ میں آج تک مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا ہے نیز انہوں نے اب تک حاصل کیا کیا ہے ۔ سجا دکریم کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ دنیا کی سب سے بڑی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام شائد اتنا ہی جانتے ہیں کہ سجاد کریم نے پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ دلوایا ہے حالانکہ یہ اس کے کارناموں میں سے ایک کارنامہ ہے اس نے اسلامی دنیا کے لئے اس سے بہت زیادہ کیا ہے ۔ مسئلہ خواہ ترکی کو یورپ کی مکمل رکنیت دلانے کا ہو یا میانمار (برما) کے نہتے و بے قصور مسلمانوں کے قتل عام کا یاپھر بنگلہ دیش کے مسلمانوں کا ہو یا افغانستان و کشمیر کا سجاد کریم ہمیشہ مسلمان کمیونٹی کی آواز بنا ۔ میاں عبدالحمید نے کہا کہ جب مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی اجتماعی قبروں کا انکشاف ہوا تو سجاد کریم نے فوری طور پریورپی یونین پر زور دیا کہ بھارت کے ساتھ تجارت بند کی جائے جس پر بھارتی حکومت کو اس معاملے پر تفتیش کروانی پڑی ۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس پی پلس کو ہائی جیک کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں لیکن یہ یادرہے کہ جی ایس پی پلس کسی دوسرے سیاستدان یا سیاسی پارٹی کی وجہ سے نہیں بلکہ سجادکریم کی کوششوں سے یہ کامیابی حاصل ہوئی ہے اور ہمیں سجاد کریم پر فخر ہے کہ نیلسن کے اس سپوت نے دنیا بھر میں ہمیں عزت سے نواز ا ہے ۔ سجادکریم نے ہماری نمائندگی کا مکمل حق ادا کیا ہے اور ہمیں آئندہ بھی اس کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنانا ہے ۔ تقریب سے پینڈل کونسل کے لیڈر کونسلر جو قونی ، فراز بھٹی ، سابقہ کونسلرمذکر علی ، شمیم راجہ ، صغیر احمد اور چوہدری اسلم جاوید نے پاکستان کو یورپی یونین میں جی ایس پی پلس کا درجہ دلوانے اور مسئلہ کشمیر کو یورپی پارلیمنٹ میں اجاگرکرنے نیزبرادر اسلامی ملک ترکی کو یورپی یونین میں مکمل رکنیت دلوانے کی کوششیں کرنے پر زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے اس عزم کا اظہار کیا کہ سجاد کریم کو تیسری مرتبہ بھی یورپی پارلیمنٹ کا ممبر منتخب کروایاجائے گا کیونکہ انہوں نے یورپی پارلیمنٹ میں عوام کی نمائندگی کا حق احسن طریقے سے پوراکیا ہے۔ تقریب کا آغازسید اختر حسین شاہ کی تلاوت کلام پاک سے جبکہ نعت رسول مقبولؐ فیضان فیصل فیضان نے پیش کی ۔ ابتداء چوہدری اسلم جاوید نے تنظیم کے اغراض و مقاصد پیش کر کے کیا ۔ اس تقریب میں میڈیا کے نمائندے ، سیاسی کارکن اور عوام کی بہت بڑی تعداد بھی موجود تھی ۔