مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
طوائف کو گاڑی میں بٹھانے کے جرم کو چھپانے کے لیےٹماٹرخریدنے کا بہانہ... 1065پاؤنڈ جرمانہ
والسل...مڈلینڈز میں ایک شخص نے طوائف کے ساتھ گاڑی میں پکڑے جانے پر پولیس کو بتایا کہ ان کی گاڑی میں بیٹھی خاتون انہیں ٹماٹر کی دکان دکھا رہی تھی۔مڈلینڈز پولیس کے مطابق انھوں نو مئی کو محمد اخلاق کی نسان مائیکرا گاڑی میں ایک خاتون کو دیکھا جبکہ وہ خودکار کیش مشین سے رقم نکال رہے تھے۔اخلاق نے پولیس کو بتایا کہ وہ ان پیسوں سے ٹماٹر خریدنے کا ارادہ رکھتے تھے۔ تاہم پولیس اہلکاروں نے گاڑی میں سوار علاقے کی مشہور طوائف کو پہچان لیا تھا۔وال سیل کی پولیس کانسٹیبل سٹیسی پیٹرسن نے کہا: ’میں نے اس سے پہلے بھی بڑے بہانے سنے ہیں لیکن پولیس میں اپنی دس سالہ سروس کے دوران میں نے کبھی کسی شخص کو سیکس کے لیے طوائف کو گاڑی میں بٹھانے کے جرم کو چھپانے کے لیے ٹماٹر خریدنے کا بہانہ کرتے نہیں دیکھا۔انھوں نے کہا ’پولیس نے اخلاق کے جھوٹ کو پکڑ لیا اور وہ عدالت میں مجرم پائے گئے ہیں۔محمد اخلاق کی عمر 39 سال ہے اور وہ نیو سٹریٹ ڈڈلی کے رہنے والے ہیں۔عدالت نے انہیں نہ صرف طوائف کی خدمات حاصل کرنے کے جرم میں 400 پاؤنڈ جرمانہ کیا بلکہ کہا کہ وہ عدالتی خرچ کی مد میں مزید 665 پاؤنڈ ادا کریں۔