مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برطانوی ترقی میں کمیونٹی کے کردار کومسخ کرنے کے منفی نتائج برآمد ہوسکتے ہیں: سجاد کریم
مانچسٹر ... نارتھ ویسٹ انگلینڈ سے یورپی پارلیمنٹ کے کنزرویٹو رکن اور یورپی پارلیمنٹ میں فرینڈز آف پاکستان گروپ کے چئیرمین ڈاکٹر سجاد حیدر کریم کو پاکستان کی یونیورسٹی کی طرف سے دی جانے والی ڈاکٹریٹ کی اعزازی ڈگری کی خوشی میں مانچسٹر میں کمیونٹی کی ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں برطانیہ بھر سے کمیونٹی راہنماؤں نے شرکت کی ۔ یادرہے کہ سجاد کریم کو ڈاکٹریٹ کی یہ اعزازی ڈگری یورپی یونین کے ساتھ پاکستان کے تجارتی معاہدے جی ایس پی پلس میں ان کی شاندار خدمات کے اعتراف کے طور پر دی گئی جس کا برطانیہ اور یورپ کی پاکستانی کمیونٹی نے زبردست خیر مقدم کرتے ہوئے سجادکریم کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں یقین دلایا ہے کہ گذشتہ دو انتخابات کی طرح آئندہ مئی میں ہونے والی یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں ان کو ایک دفعہ پھر بھاری اکثریت سے کامیاب بنایا جائے گا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر سجاد حیدر کریم نے کہا کہ گو برطانیہ میں پاکستانی کمیونٹی کی پانچویں اور چھٹی نسل پروان چڑھ چکی ہے لیکن برطانیہ کی ترقی میں پاکستانی کمیونٹی کا کردار اس سے کہیں پہلے شروع ہو گیا تھا جب کہ ابھی برصغیر میں تاج برطانیہ کی حکمرانی تھی ۔ تاہم اس بات سے انکار نہیں کیا جا سکتا کہ برطانیہ کو معاشی طور پر ترقی دینے میں پاکستانی کمیونٹی کا بہت بڑا کردار ہے لیکن ان کے کردار کو جس طرح مسخ کرنے کی کوششیں ہو رہی ہیں اس پر انہیں سخت تشویش ہے ۔اگر برطانیہ کی ترقی میں پاکستانی کمیونٹی کے کردار کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی تو اس کے خطرناک نتائج برآمد ہو سکتے ہیں ۔ کمیونٹی کو اتحاد و اتفاق کے ساتھ پروان چڑھنے کا موقع دیا جائے ۔ انہوں نے برطانوی پارلیمنٹ میں فرینڈز آف پاکستان گروپ کے راہنما اینڈریو سٹیفن سن ایم پی کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان کی مدد اور تائید کے بغیر میں یہ سب کچھ نہ کر سکتا۔ دس سالوں سے اینڈریو نے ان کے ساتھ ہر معاملے میں ہم آہنگی کا مظاہرہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ انہیں ڈاکٹریٹ کی جو ڈگری دی گئی ہے وہ ان کا نہیں بلکہ نارتھ ویسٹ انگلینڈ کے تمام شہریوں کا اعزاز ہے کیونکہ ان کی مدد اور تائید کے بغیر میں کچھ بھی نہیں ہوں ۔ یہ نارتھ ویسٹ کے شہری ہیں جنہوں نے مجھے اعتماد دے کر اس قابل بنایا کہ میں کچھ کر سکوں ۔ ڈاکٹر سجاد حیدر کریم نے برطانیہ میں ہائی کمشنر آف پاکستان واجد شمس الحسن کو مخاطب کر کے کہا کہ جی ایس پی پلس کے باوجود یہ بات ریکارڈ پر ہے کہ حکومت پاکستان کی طرف سے یورپی یونین کے ساتھ تعلقات کو فروغ دینے کے لئے کوئی خاص کام نہیں ہو رہا ۔ اس معاہدے کے لئے ہم نے گذشتہ آٹھ سالوں میں جو کوششیں کی ہیں پاکستان کی کسی حکومت یا منتخب نمائندوں کی طرف سے کبھی بھی گرمجوشی کامظاہرہ نہیں کیا گیا بلکہ اکثر سیاستدان تو یہی سمجھتے رہے ہیں کہ یہ ایک ناممکن کام ہے اور کسی نے اس طرف توجہ نہیں دی ۔ تاہم برطانیہ کے پہلے پاکستانی نژاد رکن پارلیمنٹ چوہدری محمد سرور جب گورنر بنے تو انہوں نے اس مسئلے کی اہمیت کو اجاگر کر کے وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف کا اعتماد حاصل کیا اور میری حوصلہ افزائی کی جس سے جی ایس پی پلس کا وہ حصہ جو پاکستان سے متعلق تھا مکمل ہوا اور آج ہم اس قابل ہوئے کہ پاکستان کو یورپی یونین کی مارکیٹوں میں اپنی مصنوعات ڈیوٹی فری فروخت کرنے کاسٹیٹس دلوا سکیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ یورپی یونین میں مختلف ملکوں کے فرینڈشپ گروپ ہیں جن کو ان ملکوں کی حکومتیں یا کاروباری تنظیمیں چلا رہی ہیں لیکن فرینڈز آف پاکستان گروپ کو پاکستان کی حکومت کی طرف سے کوئی مثبت ریسپانس نہیں دیا گیا اور یہ گروپ وہ خود چلا رہے ہیں جس کی ساری فنڈنگ وہ خود کرتے ہیں ۔ اب وقت آ گیا ہے کہ پاکستان کی حکومت کو ان معاملات پر غور کرنا چاہئیے اور یورپی یونین کے ساتھ اپنے تعلقات کو مضبوط بنا کر مزید فوائد حاصل کرنے کے راستے ہموار کرنے چاہئیں ۔ ہائی کمشنر واجد شمس الحسن تالیوں کی گونج میں سجاد کریم کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ جی ایس پی پلس معاہدہ اکیلے سجاد کریم کی کوششوں سے ہوا ہے اور اس میں کسی دوسرے کا کوئی کردار نہیں ۔ انہوں نے نارتھ ویسٹ کی پاکستانی کمیونٹی سمیت سجاد کریم کو ڈاکٹریٹ کی ڈگری ملنے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ آپ کا حق ہے کہ آپ کی خدمات کا اعتراف کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ آج جب ہم یہ تقریب منا رہے ہیں تو آج ہی کے دن پاکستان کی عظیم لیڈر محترمہ بینظیر بھٹو کی شہادت بھی ہوئی تھی جو مجھے اپنی چھوٹی بہن کی طرح عزیز تھیں اور جنہوں نے پاکستان کے عوام کو ترقی کی راہ پر ڈالا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ یقیناًپاکستان کی حکومت کو یورپی یونین کے ساتھ تعلقات کو مضبوط بنانا ہو گا اور جن معاملات کی طرف سجاد کریم نے اپنی تقریر میں اشارہ دیا ہے ان پر عمل ہو گا کیونکہ پاکستان کے وزیر اعظم میاں نواز شریف ملک کی معاشی ترقی کے لئے اعلیٰ اور ٹھوس اقدامات کر رہے ہیں ۔ انہوں نے برطانیہ کی پاکستانی کمیونٹی کی ترقی اور پاکستان کے ساتھ ان کی محبت کے جذبے کو سراہتے ہوئے کہا کہ برطانیہ ایک ایسا ملک ہے جہاں ہر شخص کو مساوی مواقع اور سہولتیں حاصل ہیں ۔ پاکستان کی کمیونٹی نے ان سہولتوں سے فائدہ اٹھا کر پاکستان کو ہر طرح سے مضبوط بنایا ہے۔ برطانوی پارلیمنٹ میں آل پارٹی پارلیمانی گروپ آن پاکستان کے چیئرمین اینڈریو سٹیفن سن ایم پی نے سجاد کریم کوخراج تحسین پیش کیا اور انہیں ہر طرح کی مدد کا یقین دلایا ۔ سجاد کریم کے بھائی اعجاز کریم نے مختصر خطاب میں کہا کہ یہ اعزاز نارتھ ویسٹ انگلینڈ کی ساری پاکستانی کمیونٹی کا اعزاز ہے ۔ تقریب کا آغاز ضیاء چوہدری نے تلاوت کلام پاک سے کیا جبکہ اس موقع پر سجادکریم کے بیٹے اور بیٹی نے بھی اپنے جذبات کا اظہارکیا ۔ تقریب میں قونصل جنرل آف پاکستان مانچسٹر ڈاکٹر ظہور احمد ، کمیونٹی ویلفئیر اتاشی ساجد قاضی ، کونسلرز اورکمیونٹی راہنماؤں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ (رپورٹ و تصاویر: عبداللہ زید)