مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جی ایس پی۔پلس سے پاکستان کو یورپی ممالک کے ساتھ تجارت کی سہولت ملی ہے: سجادکریم
میرپور ... کشمیرکونسل ای یو کے چیئرمین علی رضاسیدنےرکن یورپی پارلیمنٹ اور ای یوپارلیمنٹ فرینڈز آف پاکستا ن گروپ کے چیئرمین سجادحیدرکریم کے اعزاز میں عشائیہ دیا۔ عشائیے سے ڈاکٹر سجادحیدرکریم اورعلی رضاسید کے علاوہ کشمیرکونسل ای یو کے اہم رہنماء سردارمحمد صدیق، آل پارٹیز حریت کانفرنس کے رہنماء پرویزاحمد ایڈوکیٹ، چمبرز آف کامرس میرپورکے صدر عظیم مشتاق، مسلم لیگ ن کے رہنماء اور رکن آزادکشمیراسمبلی چوہدری طارق فاروق، چوہدری محمد صدیق،سابق میئرمیرپور چوہدری اشرف، سابق وزیرصحت مسعود خالداور مسلم لیگ ن کے چوہدری سعیدنے خطاب کیا۔ ان کے علاوہ تقریب میں مقامی انتظامیہ و دیگر اہم شخصیات بھی شریک ہوئیں۔سٹیج پر دیگرمعزز مہمانوں کے ساتھ سابق ڈی آئی جی پولیس سیدظہورحسین شاہ بھی موجود تھے۔مقررین نے سجادحیدرکریم کی پاکستان اور کشمیرکے لیے خدمات پر اور علی رضاسید کو یورپ میں مسئلہ کشمیرکو اجاگرکرنے پر زبردست خراج تحسین پیش کیا۔ انھوں نے سجادحیدرکریم اور ان کی ٹیم کی طرف سے پاکستان کی مصنوعات کی یورپی منڈیوں تک ڈیوٹی فری رسائی کی سہولت حاصل کرنے میں کامیابی پر ان کی تعریف کی اور اسے ایک عظیم تاریخی کارنامہ قرار دیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے رکن ای یو پارلیمنٹ سجادحیدرکریم نے کہاکہ انھیں خوشی ہوئی ہے کہ میرپورکے لوگوں نے ان کا بھرپورخیرمقدم کیااور ان کی حوصلہ افزائی کی ہے۔ انھوں نے جی ایس پی ۔پلس کے بارے میں کہاکہ اس کام میں ان کے علاوہ اور بہت سے لوگ شامل ہیں جنھوں نے بھرپورکرداراداکیا۔ انھوں نے خاص طورپر گورنرپنجاب چوہدری سرور کا ذکر کیا، جنھوں نے اپنے ذاتی تعلقات اور اثرورسوخ کو استعمال کیا ۔ ان کے علاوہ برسلزمیں پاکستانی سفارتخانے اور دیگرشخصیات نے بھی اہم کردارکیا۔ اس سے قبل سجادکریم خطاب کرنے کے لیے روسٹرم پر آئے تما م شرکاء نے اپنی کرسیوں سے اٹھاکران کا استقبال کیا اوران کے حق میں تالیاں بجائیں۔ سجادکریم نے اپنے خطاب میں شکوہ کرتے ہوئے کہاکہ تین دن قبل لاہورمیں آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کی جانب سے پاکستان کو جی اس پی ۔پلس کا درجہ ملنے کے حوالے تقریب کے دوران وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے جی ایس پی۔پلس کی وضاحت نہیں کی اور نہ ہی تقریب میں موجود تین اراکین یورپی پارلیمنٹ کے اس سلسلے میں کردار کا ذکر کیا جس سے انہیں معزز یورپی مہمانوں کے سامنے شرمندگی ہوئی۔ انھوں نے کہاکہ لوگ کیری لوگر بل کا ذکر کرتے ہوئے فخر محسوس کرتے ہیں حالانکہ وہ پاکستان کو ملنے والی ایک عشاریہ پانچ ارب ڈالر کی امدادتھی جبکہ جی ایس پی۔پلس سے پاکستان کو یورپی ممالک کے ساتھ تجارت کرنے کی سہولت ملی ہے جس سے پاکستان کو پانچ ارب ڈالرتک کاتجارتی فائدہ ہوگا اور لاکھوں لوگوں کو روزگارملے گا۔ انھوں نے مسئلہ کشمیر یورپ میں اجاگرکرنے کے حوالے سے کشمیرکونسل ای یو کے چیئرمین علی رضاسید اور ان کی ٹیم کی ستائش اور تعریف کی۔سجادکریم نے کہاکہ مسئلہ کشمیرکاحل بھارت کے بھی مفاد میں ہے لہذا اسے چاہیے کہ وہ اس مسئلے کا مناسب اور پرامن حل تلاش کرے۔ عالمی برادری کو چاہیے کہ اس مسئلے کے حل میں مدد فراہم کرے۔ انھوں نے کہاکہ سمندرپارپاکستانی اپنے آبائی وطن پاکستان کی محبت سے سرشارہیں لیکن حکومت پاکستان کو بھی چاہیے کہ ان کے مسائل حل کرے۔ پاکستان اووسیزپاکستانیوں کے بغیربیرونی دنیامیں اپناامیج بہترنہیں بناسکتا۔ چیئرمین کشمیرکونسل ای یو علی رضاسید نے اپنے خطاب میں کہاکہ کشمیرکونسل ای یو بھارت کی طرف سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے پردہ اٹھاتی رہے گی۔ انھوں نے کہاکہ کونسل بہت جلد لائن آف کنٹرول پر دیوار تعمیرکرنے کے بھارتی منصوبے کے خلاف مہم شروع کرے گی۔چیئرمین کشمیرکونسل ای یو نے یورپ میں مسئلہ کشمیرکو اجاگرکرنے خاص طورپر بھارت کی طرف انسانی حقوق کے خلاف آواز اٹھانے پر سجادکریم اور دیگر شخصیات کی کوششوں کو سراہا۔اس موقع پر آزادکشمیراسمبلی میں ڈپٹی اپوزیشن لیڈراور رکن اسمبلی چوہدری طارق فاروق نے کہاکہ سجادحیدرکریم اور علی رضاسید نے نہ صرف مسئلہ کشمیرکو یورپ میں بہتراندازمیں پیش کیاہے بلکہ پاکستان کا امیج بہتر بنانے میں مدد دی ہے۔ انھوں نے کہاکہ ہم نے ایمانکلسن کی رپورٹ پر بھی علی رضاسید کی سربراہی میں ایک وفد کے ساتھ سجادحیدرکریم سے ملاقات کی اور ان کی کوششوں سے ایمانکلس کی رپورٹ کے منفی نکات کو پاکستا ن کے حق میں بہتربنانے میں اہم کردار اداکیاتھا۔ ڈاکٹر سجادکریم نے میرپورمیں اپنے قیام کے دوران پریس کلب ، بار ایسوسی ایشن اور میرپوریونیورسٹی سے بھی خطاب کیا۔