مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پرتشدد فلموں کا اثریا منہ زوری، امریکی سکول میں فائرنگ کا ایک اور واقعہ، حملہ آور ہلاک
کولوراڈو ...بات ڈرون حملوں کی ہو یا پرتشدد فلموں کی کسی ملک پر جارحیت کی ہو یا در اندازی کی امریکہ کا نام سب سے پہلے آتا ہے، بالکل اسی طرح دنیا میں کہیں بھی کسی تعلیمی ادارے میں فائرنگ کی خبر ہو تو ذہن فوری طور پر امریکہ کیطرف جاتا ہے کہ ریکارڈ کے مطابق ایسے سب سے زیادہ واقعات امریکہ میں ہی ہوتے ہیں۔ گذشتہ روز ایسے ہی واقعات کے تسلسل میں ریاست کولوراڈو میں ایک نوجوان نے فائرنگ کرکے ایک ساتھی طالب علم کو زخمی کرنے کے بعد خود کو گولی مار کر ہلاک کرلیا۔ پولیس کے مطابق 18 سالہ حملہ آور طالب علم کی فائرنگ سے زخمی ہونے والی لڑکی اسپتال میں تشویشناک حالت میں زیر علاج ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آور کی ایک استاد سے رنجش تھی اور وہ بندوق تھامے اسکول میں داخل ہوا تھا۔ حملے کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے سکول کو چاروں طرف سے گھیر لیا، سب سے زیادہ جزباتی منظر وہ تھا جب متعلقہ ٹیچر صحیح سلامت سکول سے باہر آئی اور آتے ہی آپریشن کے سربراہ پولیس آفیسر سے لپٹ گئی۔ پولیس آپریشن کے سربراہ کائونٹی شیرف گریسن رابنسن کے مطابق حملہ آور متعدد قسم کے ہتھاروں سے لیس تھا، اس نے جس لڑکی کے سر میں گولی ماری بظاہر اس سے ملزم کا کوئی تعلق نہ تھا۔ حملہ آور نے لائیبریری میں ایک دھماکہ بھی کیا جس سے کوئی جانی تقصان نہ ہوا۔ امریکہ میں یہ واقعہ جہاں پیش آیا اس کے قریب ہی واقع کولمبائن ہائی اسکول میں 1999ء میں دو طالب علموں نے اپنے ساتھی طلبا اور اسکول کے اسٹاف سمیت 13 افراد کو گولیاں مار کر ہلاک کرنے کے بعد خودکشی کر لی تھی۔ اسکول میں فائرنگ کا یہ واقعہ کنکٹی کٹ کے علاقے نیوٹاؤن میں سینڈی ہُک ایلمنٹری اسکول میں فائرنگ کے واقعے کی پہلی برسی سے ایک روز قبل پیش آیا۔ اُس واقعے میں بھی حملہ آور نے خود کو مارنے سے قبل 20 بچوں سمیت 26 افراد کو ہلاک کردیا تھا۔