مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
اسلامی ہیرو عمر الیاس نے تمام مسلمانوں کے جذبات کا پاس رکھا : چوہدری بشیر رٹوی
مانچسٹر(محمد فیاض بشیر)مسلم کانفرنس”تحریک کشمیر بورڈ“برطانیہ و یورپ کے چیئرمین چوہدری بشیر رٹوی نے ناروے میں قرآن پاک کو نذر آتش جیسے افسوسناک واقعہ کی مذمت اور اسلامی ہیرو عمر الیاس کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمر الیاس نے تمام مسلمانوں کے جذبات کا پاس رکھا اور اکیلے ہی ملعون شخص سے لڑنے نکلا۔ہم عمر الیاس کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،عمر الیاس واقعی مسلمانوں کا ہیرو ہے۔مسلمان دوسرے مذاہب کا احترام کرتے ہیں اور دیگر مذاہب کے لوگوں کو بھی مسلمانوں کے جذبات اور احساسات کا احترام کرنا چاہیے۔اقوام متحدہ قرآن کی بے حرمتی کے واقعے کا نوٹس لے۔دنیا بھر کے مسلمان توہین قرآن کے مرتکب لارس تھورسن کو قرار واقعی سزادینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ ناروے کے شہر کرسٹین سینڈ میں اسلام مخالف تنظیم (سیان) کے کارکنوں نے ریلی نکالی جس میں قرآن کی شدید بے حرمتی کی گئی اور ایک نسخے کو آگ لگا دی گئی۔ اس موقع پر ناروے کی پولیس خاموش تماشائی بنی رہی اور تنظیم کے سربراہ لارس تھورسن کو روکنے کی کوئی کوشش نہیں کی گئی۔ لارس تھورسن ناروے کے شہر اوسلو میں اسلام مخالف اشتعال انگیز لٹریچر پھیلانے کے جرم میں پہلے بھی 30 روز قید کی سزا بھگت چکا ہے۔ان خیالات کا اظہار اُنھوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اُن کا کہنا تھا کہ آج مسلمانوں پر حملے ہورہے ہیں، مسلمان مظلوم قوم بن چکی ہے، مسلمانوں کے اتحاد کا وقت آچکا ہے، غیرمسلم ممالک گزشتہ دس سال سے مسلمانوں کے خلاف سازشوں میں مصروف عمل ہیں، کبھی نبی کی شان میں گستاخی کرنے کا حربہ استعمال کرتے ہیں توکبھی قرآن کی بے حرمتی کے مرتکب ہوتے ہیں۔ جو مسلمانوں کے جذبات سے کھیلے کے مترادف ہے کیونکہ قران ہی غیرمسلموں کی راہ میں رکاوٹ اور چیلنج ہے۔اُن کا کہنا تھا تمام مسلمان ممالک اتحاد و یکجہتی سے یہود و ہنود کی سازشوں کا مقابلہ کریں تو عزت و منزلت مسلمانوں کا ضرور مقدر بنے گی۔