مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں کمیونٹی لیڈر بننے کیلئے رہنمائوں کا ایشوز پر آگے آنا انتہائی ضروری ہے: لارڈ نذیر احمد
لندن ... برطانیہ میں پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کے سرکردہ رہنما لارڈ نذیر احمد نے کہا ہے کہ مقامی لوگوں کو اکٹھا کرکے میٹنگ کرلینے سے کوئی لیڈر نہیں بن جاتا ہماری کمیونٹی کو یہ حقیقت باور کرنا ہوگی کہ برطانیہ ایک ترقی یافتہ ملک ہے جہاں رنگ، نسل، قوم اور مذہب کو اتنی اہمیت حاصل نہیں جتنی فطری صلاحیت کو حاصل ہے۔ پاکستان پریس کلب یوکے کی ایگزیکٹو کونسل کی تقریب حلف برداری سے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ میری بات کی تائید برطانیہ میں کسی بھی سیٹ پر منتخب ہونے والا ہر عوامی نمائیندہ کر سکتا ہے۔ تقریب سے مسلم لیگ ن کے سیکریٹری اطلاعات سینیٹر مشاہد اللہ، ورلڈ کانگریس آف اوورسیز پاکستانیز کے چیئرمین سید قمر رضا، فورم فار انٹرنیشنل ریلیشنز ڈویلپمنٹ کے چیئرمین طحہ قریشی، وزیر اعلی پنجاب کے سابقہ ایڈوائزر اوورسیز کمیٹی ذبیر گل نے بھی خطاب کیا۔ جبکہ اسٹیج پر پریس کلب کے صدر فیاض غفور ہمراہ تھے، نظامت کے فرائض سیکریٹری جنرل اظہر جاوید نے ادا کئے۔ لارڈ نزیر احمد نے کہا کمیانٹی کی لیڈرشپ کا شوق تو ہر ایک کو ہے لیکن ان سے گزارش ہے کہ جب کنیونٹی پر حرف آئے تو بولا بھی کریں، انہوں نے کہا پچھلے دنوں دومینک گریو نے ہماری کمیونٹی بارے غلط بیان دیا اور پھر معافی مانگ لی جبکہ میں نے کبھی کچھ غلط کیا ہی نہیں اور نہ ہی معافی مانگنے کی ضرورت محسوس ہوئی تب بھی ہدف ہوں تو ایسے میں دومینک گریو کی معافی ہم کیسے قبول کر لیں۔ انہوں نے کہا آج کی دنیا میں مسلمانوں کو آسان ہدف سمجھا جا رہا ہے، برطانوی فوجی کو قتل کرنے والی نوجوان مائکل آڈیبولاجو اور مائیکل آدیبوالے کہاں کے مسلمان ہیں؟ وہ کب اور کیسے مسلمان ہوئے کسی کو نہیں پتہ لیکن سب کو یہ ضرور پتہ ہے کہ مسلمان اور اسلام کے خلاف محاذ بنایا جا رہا ہے، ہم ایسے ہر محاذ کے خلاف ہیں آپ انجم چوہدری کی بات کرتے ہیں ہم اسے فیور نہیں دیتے، کیوں حکومت برطانیہ اسے گرفتار نہیں کرتی؟ لارڈ نذیر احمد نے کہا میں کبھی کسی شخصیت یا ادارے کے خلاف نہیں رہا لیکن جہاں مجھے پاکستان یا برطانیہ کے خلاف سازش نظر آئے گی ضرور بولوں گا۔ انہوں نے کہا حکومت برطانیہ سے کوئی پاکستانی ادارہ ضرور امداد حاصل کرے لیکن اسے عوام کے سامنے مانے بھی اور اس کا حساب بھی دے کہ کس لئے لی تھی اور کہاں خرچ کی؟ پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما سینیٹر مشاہد اللہ نے پاکستان پریس کلب کے نو منتخب عہدیداران کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ آپ کا ہر سال الیکشن کرانے کا عمل خوش آئند ہے کہ آپ بطور میڈیا پرسن دوسروں سے کہیں اس پر عمل بھی تو کر کے دکھائیں، انہوں نے کہا چیک اینڈ بیلنس ہر شعبے کا لازمی عنصر ہے موجودہ حکومت پر تنقید ضرور کریں لیکن چند ماہ کے مختصر ترین عرصے میں اس نے جو کر دکھایا اسے تو باور کریں۔ انہوں نے کہا مخالفین فوری طور پر ہمیں کہہ دیتے ہیں کہ چار ماہ میں کیا کیا لیکن اپنی سالوں کی کارکردگی پر نظر ڈالنا گوارا نہیں کرتے۔ انہوں نے کہا ہم مسلم لیگ والے کسی بھی اچیومنٹ کی بات نہ کریں لیکن مشرف دور اور زرداری دور کا بجلی کا سرکلر ڈیٹ جو پانچ سو ارب تک جا پہنچا تھا اسے ہمیں نے اتارا ہے، اسی طرح بڑی بڑی باتیں کرنے والوں کے برعکس کراچی میں کرائم ریٹ بھی ہمارے پہلے چھ ماہ میں کم ہوا۔ سینیٹر مشاہد اللہ نے کہا میں کسی قسم کی فیور کی بات نہیں کرتا آپ برطانیہ جیسے ملک میں بیٹھے ہیں غیر جانبداری سے دیکھیں تو جتنے کام اس حکومت نے چند ماہ میں کئے سابقہ پورے ادوار میں نہ ہوسکے۔ اس موقع پرلارڈ نذیر احمد نے پاکستان پریس کلب یوکے کی ایگزیکٹو کونسل 2013 سے حلف لیا۔ تقریب میں مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے پروفیشنلز میں ایوارڈز بھی تقسیم کئے گئے جنہیں حاصل کرنے والوں میں ورلڈ وائیڈ سالیسٹرز کے چوہدری خالد، یوکے اسلامک مشن کے سید شوکت علی، فرد کے چیئرمین طحہ قریشی، ورلڈ کانگریس کے سید قمر رضا شامل تھے۔ پاکستان پریس کلب کی حلف برداری کی اس تقریب میں ملک بھر سے صحافیوں اور کمیونٹی رہنمائوں نے شرکت کی۔