مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان قدرتی وسائل اور افرادی قوت سے مالا مال دنیا کا اہم ملک ہے،برطانوی طلبا کوبریفنگ
لندن ... پاکستان قدرتی وسائل سے مالا مال اور دنیا کی بہترین محنت کش ورک فورس سے بھرپور دنیا کا چھٹا بڑا ملک ہے، اسکی آب و ہوا، بدلتے موسم اور دنیا کے انتبائی اہم خطے میں واقع ہونا اس کی جغرافیائی اہمیت اور اور واضع کرتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار پاکستانی ہائی کمشنر واجد شمس الحسن نے برطانوی طلبا کے ایک گروپ سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ جنوب مشرقی لندن کے نواح میں واقع کینٹ کے دی سکنرز سکول کے 17 رکنی اس طلبہ وفد نے اگلے سال جنوری میں امریکی ریاست بوسٹن کے شہر میسا چوسٹس میں ہارورڈ ماڈل یونائیٹڈ نیشنز کانفرنس کے 61 ویں سیشن میں پاکستان کی نمائندگی کرنی ہے۔ ان طلبہ کو پاکستان میں گہری دلچسپی اور انکی زادی صلاحیتوں کی بنا پر چنا گیا ہے۔ منتخب کیے گئے طالب علم اہم غیر ملکی پالیسی معاملات پر اپنی تجاویز پیش کرکے اور عملدرآمد نہ ہونے والی اقوام متحدہ کی قراردادوں پر مذاکرات کے ذریعے پاکستان کا نقطہ نظر پیش کریں گے۔ یہ طالب علم اپنے انگلش ٹیچر جیمز کولٹیلا کے ہمراہ تھے۔ ہائی کمشنر نے طالب علموں کو پاکستان، اس کا جغرافیہ، ثقافت، ورثہ، لوگ اور معیشت پر تعارف پیش کیا۔ ہائی کمشنر کا کہنا تھا کہ پاکستان انتہائی ہنرمند افرادی قوت اور قدرتی وسائل میں دنیا کا چھٹا بڑا ملک ہے۔ پاکستان انتہائی اہم اور خوبصورت جغرافیائی مکانیت کا حامل ہے، جہاں میدانی علاقوں سے لے کر صحراؤں اور بلند ہموار علاقوں سے لے کر ہمالیہ، قراقرم اور ہندوکش کے پہاڑی سلسلے موجود ہیں۔ پاکستان کی خارجہ پالیسی پر گفتگو کرتے ہوئے ہائی کمشنر نے بتایا کہ پاکستان کی خارجہ پالیسی بین الاقوامی امن اور سلامتی کی بنیاد پر مرتب کی گئی ہے۔ مزیدبرآں ہائی کمشنر واجد شمس الحسن نے اس امر پر روشنی ڈالی کہ حکومت پاکستان ملک میں دہشت گردی کے پرامن اختتام کا فیصلہ کرچکی ہے۔ اور اپنے ہمسایہ ممالک جن میں چین، بھارت اور افغانستان شامل ہیں سے بہتر تعلقات استوار کر رہی ہے۔