مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
متاثرین زلزلہ کیلئے پاک فوج کی امدادی کارروائیاں لائق تحسین ہیں:چوہدری بشیر رٹوی
مانچسٹر(محمد فیاض بشیر) آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس ”تحریک کشمیر بورڈ“برطانیہ و یورپ کے چیئرمین‘چوہدری بشیر رٹوی نے ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاک فوج کے جوانوں کو سلام جھنوں نے زلزلہ متاثرین کی امداد میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔پاک فوج کی امدادی کارروائیاں لائق تحسین ہیں۔ میر پور اور مضافات میں خوفناک زلزلہ کے متاثرین کے دکھ میں شریک ہیں۔قدرتی آفات اتنی طاقتور اچانک اور شدت کی حامل ہوتی ہیں کہ ان کے سامنے ٹھہرنا انسانی بس سے باہر ہے۔حکومت آزاد کشمیر حالات معمول پر لانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کرے۔سماجی تنظیمیں انتظامیہ کے دست راست بن کرمتاثرین کی آباد کاری میں حصہ لیں۔متاثرین کی بھرپور مدد کی جائے اور زلزلے سے متاثرہ آبادی کا پورا خیال رکھا جائے۔اُنھوں نے زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا بھی کی اور انتظامیہ سے اپیل کی کہ زخمیوں کو ہرممکن سہولیات فراہم کی جائیں۔زلزلہ سے متاثر ہونے والی املاک کے نقصانات کا تخمینہ لگا کر فنڈز دینے کا بندوبست کیا جائے۔اعلیٰ حکام لزلہ متاثرہ علاقوں میں امدادی اور بحالی کے کاموں کی خود نگرانی کریں۔متعلقہ ادارے فوری طور پر متاثرہ افراد کو ہر قسم کی امداد کی فراہمی کیلئے اقدامات کریں۔ عوام کی آگاہی کیلئے معلوماتی مراکز اور ہیلپ لائن قائم کی جائیں اور پاکستان کی وفاقی اور صوبائی حکومتیں حکومت آزاد کشمیر کے ساتھ مل کر امدادی سرگرمیوں میں حصہ لیں۔اُنھوں نے کہا کہ بطور مسلمان یہ ہمارے فرائض میں شامل ہے کہ ہم حتی المقدور دکھی اور متاثرہ لوگوں کی دلجوئی ومدد کریں اور ان کو مشکل وقت میں تنہا نہ چھوڑیں۔ بہت سے لوگوں کے مکانات کاروباری مقامات اور املاک کا نقصان ہوا ہے جن کی تعمیرومرمت کیلئے ان کی دست گیری کی ضرورت ہے اس سے بھی قبل جو لوگ بے گھر اور زخمی ہوئے ہیں ان کا علاج معالجہ اور ان کیلئے پناہ گاہوں کا بندوبست متعلقہ اداروں کا تو فرض ہے ہی اس کے ساتھ یہ بطور مسلمان ہم سب کی بھی ذمہ داری ہے کہ ہم بلا امتیاز ان کی مدد کو آگے آئیں اور ان کی صحت یا بی وبحالی میں ان کی پوری مدد کریں۔اُنھوں نے مزید کہا کہ۔آفات سماوی وارضی قدرت کی طرف سے بھی ایک انتباہ ہیں جس کا تقاضا ہے کہ ہم اپنے کردار وعمل کی اصلاح پر توجہ دیں گناہوں اور بد عنوانیوں سے توبہ کر کے مالک حقیقی کی طرف متوجہ ہو جائیں۔