مقبول خبریں
مدر فائونڈیشن گوجرخان کے روح رواں راجہ عرفان کی برطانیہ آمد پر انکے اعزاز میں استقبالیہ
ماحولیاتی آلودگی کے باعث بچہ ماں کے رحم میں مر جاتا ہے یا اسکی افزائش رک جاتی ہے: ایک تحقیق
پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری محمد رضا کی زیر صدارت عہدیداران و کارکنان کا اجلاس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
پروفیٹک گفٹس ویڈنگ اینڈ ایونٹس آرگنائزر کے زیر اہتمام ایشین ویڈنگ اینڈ پلانرز ایونٹ کا انعقاد
میرے تمام خواب نظاروں سے جل گئے
پکچرگیلری
Advertisement
اولڈہم کونسل کی میٹنگ میں مقبوضہ کشمیر کے اندر انسانی حقوق کی پامالیوں کیخلاف قرارداد منظور
اولڈہم (محمد فیاض بشیر)برطانیہ کی دیگر مقامی کونسلوں کی طرح اولڈہم کونسل نے اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں ، بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روح سے کشمیری قوم کو انکا پیدائشی حق خود ارادیت دینے بارے کشمیری نژاد برطانوی کونسلر ڈاکٹر زاہد چوہان نے قرارداد پیش کی کونسلر عتیق الرحمٰن نے اسکی تائید کی کونسل اجلاس میں قرارداد پر بحث مکمل ہونے کے بعد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر زاہد چوہان کا کہنا تھا کہ اقوام عالم کو یاد کروایا جائے کہ مقبوضہ کشمیر برصغیر کا مسئلہ نہیں بلکہ پوری دنیا نے اس پر دستخط کیے ہوئے ہیں ۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کی گیارہ قراردادیں مسئلہ کشمیر پر موجود ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ برطانوی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں بارے بھارت کی حکومت سے رابط کریں اور اسکے خلاف آواز اٹھائیں اور اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل درآمد کو یقینی بنائیں۔ کونسلر عتیق الرحمٰن کا کہنا تھا کہ ہم تمام کونسلرز کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے مشکل کی اس گھڑی میں کشمیری قوم کا ساتھ دیا ان کا مذید کہنا تھا ہم برطانوی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ بھارتی حکومت سے بات چیت کر کے کشمیریوں کی تکلیف کا ازالہ کریں۔ کونسلر حینا رابٹ کا کہنا تھا کہ اولڈہم میں بسنے والے کشمیری بھارتی حکومت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی قانونی حیثیت بدلنے اور کشیدہ صورتحال بارے تشویش کا شکار ہیں ان کا کہنا تھا کہ مجھے خوشی ہے کشمیر پر قائم پارلیمانی پارٹی گروپ نے برطانوی حکومت سے اس بارے اقدام اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے اور کشمیریوں کی مدد کی ہے۔ کونسلر شعیب اختر کا کہنا تھا کہ قرارداد میں ہم نے متفقہ طور یہ بھی منظور کیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کھانے پینے ادویات اور دیگر ضروری سامان کی ترسیل کو نہ روکا جائے۔ کونسلر پیٹر ڈین کا کہنا تھا کہ کشمیر پر ڈھائے جانے والے مظالم مجرمانہ فعل ہے کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روح سے حق خود ارادیت دیا جائے۔ کونسلر ریاض احمد کا کہنا تھا کہ ہم نے جو کونسل میں متفقہ قرارداد منظور کی ہے ایک تاریخی فیصلہ ہے ۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کی مذمت کرتے ہیں اور حکومت ہندوستان سے مطالبہ کرتے ہیں کشمیریوں کو جلد از جلد انکے بنیادی حقوق دیے جائیں۔ کونسل کے اپوزیشن لیڈر کونسلر سائیک نے بھی بھارت کے اقدامات کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔