مقبول خبریں
یورپین اسلامک سنٹر اولڈہم میں مسجد خضرا کی تزئین وآرائش کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر
پاکستان اور بھارت میں واقعی برابری کہاں ؟ ایک طرف محبت دوسری طرف نفرت
نوازشریف کی طرح باقی قیدیوں کوبھی علاج معالجے کیلئےرہا کیا جائے
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
اینڈریو سٹیفن سن سے راجہ نجابت حسین اور سردار عبدالرحمٰن کی ملاقات
سہمے ہوئے لوگوںسے بھی خائف ہے زمانہ
پکچرگیلری
Advertisement
9ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے باہر بھرپور مظاہرہ کرینگے:راجہ نجابت حسین
بریڈ فورڈ(فیاض بشیر)برطانوی پارلیمنٹ اور لندن میں برٹش کشمیریوں کی کامیاب سفارتی کاوشوں کے بعد9ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے باہر جنیوا میں یورپ بھر کے کشمیری بھرپور مظاہرہ کریں گے جبکہ12ستمبر کو یورپی پارلیمنٹ میں انٹر نیشنل کشمیر کانفرنس منعقد ہو گی،جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین اور سیکرٹری جنرل محمد اعظم نے برطانیہ اور یورپ میں دعوت نامے اور ذاتی رابطے تیز کر دیئے جس کیلئے برطانیہ کی سیاسی،سماجی اور مذہبی تنظیموں اور ممبران پارلیمنٹ اور کونسلروں کو متحرک کیا جا رہا ہے،مظاہرے کی کامیابی کیلئے برٹش کشمیریوں،کشمیر دوست اور ممبران پارلیمنٹ سے تعاون کی اپیل کی ہے،ان خیالات کا اظہار جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے لندن کے دو روزہ دورے کے بعد بریڈ فورڈ میں تحریکی عہدیداروں کے ہمراہ ایک پریس کانفرنس میں کیا،اس موقع پر سردار عبدالرحمان خان،ہیری بوٹا اور بریڈ فورڈ کے سابق لارڈ میئر راجہ غضنفر خالق بھی موجود تھے،راجہ نجابت حسین نے کہا کہ برطانوی کشمیریوں کی موثر لابی اور برطانوی ممبران پارلیمنٹ کے دبائو اور مسلسل سوالوں کے بعد برطانوی وزیر خارجہ نے علی الاعلان مسئلہ کشمیر کی صورت حال کو عالمی مسئلہ قرار دیتے ہوئے اس پر تشویش کا اظہار کر کے کشمیری اور برطانوی ممبران پارلیمنٹ کے نکتہ نظر کی حمایت کر کے بھارت کو بھی جھوٹا قرار دیا ہے جبکہ برطانیہ بھر کے پندرہ سے زائد ممبران پارلیمنٹ نے3ستمبر کو سوالات کی بوچھاڑ کر کے برٹش کشمیریوں کی حقیقی نمائندگی کا حق ادا کیا ہے،جبکہ3ستمبر کو ہی16ارکان پارلیمنٹ نے10ڈائوننگ سٹریٹ جا کر وزیر اعظم برطانیہ بورس جانسن کو جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنینشل کی کشمیر پٹیشن پیش کر کے برطانیہ بھر میں جاری مہم کو بھی تقویت دی جس پر ہم آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ کی چیئر پرسن ڈیبی ابراہم ایم پی اور دیگر تمام عہدیداروں کے مشکور ہیں جنہوں نے کراس پارٹی وفد بنا کر پوری پارلیمنٹ کی نمائندگی کی ہے،اسی طرح تحریک کی کشمیر لابی کانفرنس میں اور وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان کی مسلسل دو روز لابی ملاقاتوں میں بھی30کے قریب ارکان پارلیمنٹ نے کھل کر کشمیری عوام کے حق خود ارادیت اور مقبوضہ کشمیر میںمسلسل کرفیو پر تشویش کا اظہار کیا ہے،راجہ نجابت حسین نے برطانیہ بھر کے کونسلروں،کشمیری و پاکستانی جماعتوں،کشمیر دوست بھارتیوں اور برطانیہ بھر کے علما اور مشائخ کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا جنہوں کی کاوشوں سے15اگست اور3ستمبر کے مظاہرے کامیاب ہوئے اور اسی طرح بریڈ فورڈ،برمنگھم،لیوٹن،پیٹر براہ،مانچسٹر،نار تھیمپئن،نوٹنگھم اور یورپی دارالحکومتوں میں کامیاب مظاہروں میں ہمارے دوست ممبران پارلیمنٹ کی شرکت برٹش اور یورپی کشمیریوں کی مسلسل محنت کا نتیجہ ہے،اس موقع پر راجہ نجابت حسین نے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر،سپیکر آزاد کشمیر اسمبلی شاہ غلام قادر،سابق وزیر اعظم بیرسٹر سلطان محمود،اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یاسین،آزاد کشمیر کے وزیر احمد رضا قادری اور آل جموں کشمیر مسلم کانفرنس کی مرکزی سیکرٹری جنرل مہرالنسا،سابق ڈپٹی سپیکر کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے اپنے اپنے جماعتی اور ذاتی دوستوں کو 3ستمبر کے مظاہرے میں شامل کر کے اسے کامیاب بنایا۔