مقبول خبریں
بین الاقوامی میڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کی کلی کھول دی ہے:سردار مسعود خان
ڈیبی ابراھم کی قیادت میں ممبران پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کی لارڈ طارق احمد سے ملاقات
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کی وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور شاہ غلام قادر سے ملاقات
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
9ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے باہر بھرپور مظاہرہ کرینگے:راجہ نجابت حسین
سوچنے کے موسم میں سوچنا ضروری ہے!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
1965 کی جنگ میں پاکستانی فوج نے دشمن کو ناکوں چنے چبوائے:پیر ابو احمدمقصود مدنی
مانچسٹر (محمد فیاض بشیر)پاکستان علامہ ڈاکٹر محمد اقبال کی سوچ و فکر، قائد اعظم رحمۃ اللہ کی دور اندیشی اور قائدانہ صلاحیتوں کی وجہ سے معرض وجود آیا۔ قائد اعظم محمد علی جناح بھانپ گئے تھے کہ تقسیم ہند کے وقت پاکستان کی علیحدہ ریاست ناگزیر ہے اسی وجہ سے پاکستان اسلام کے نام پر معرض وجود میں آیا۔ پاکستان کے وجود کو بھارت کی شدت پسند طاقتوں نے پہلے دن سے ہی تسلیم نہیں کیا اور پاکستان کے خلاف سازشوں کا جال بچھا دیا ۔ 1965 کی جنگ میں پاکستان کی مسلح افواج، بحری اور فضائیہ نے دشمن کو ناکوں چنے چبوائے ۔ 6 ستمبر شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے یوم دفاع منایا جاتا ہے جو زندہ قوموں کی اپنے محسنوں کو یاد رکھنے کی ایک اعلی ترین مثال ہے ۔ محب الوطنی کے جذبے سے سر شار اور تاریخی حقائق کو میڈیا تک پہنچانے میں ان خیالات کا اظہار ادارہ نور السلام فیصل آباد پاکستان کے بانی پیر ابو احمد محمد مقصود مدنی نے کیا۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ دشمن ایک بار پھر مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کے ساتھ ناروا سلوک روا رکھے ہوئے ہے اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں تاریخی ہیں لیکن بھارت جان لے ماضی میں بھی اسے جنگ میں شکست ہو چکی ہے اور اگر دوبارہ پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے دیکھا تو مسلح افواج کے ساتھ پاکستان کا ہر فرد مرد مجاہد کا کردار ادا کرے گا کیونکہ ہمارا مذہب اسلام ہمیں جہاد کا حکم بھی دیتا ہے اور جب جان چلی جائے تو شہادت کا رتبہ ملتا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ یوم دفاع کے موقع پر میں پاکستانی و کشمیری کمیونٹی جو دنیا کے کسی بھی کونے میں بستی ہے درخواست کرتا ہوں کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بارے ہر محاذ پر آواز بلند کرتے تاکہ عالمی طاقتوں،انسانی حقوق کی علمبردار تنظیموں تک کشمیر میں ہونے والے مظالم بارے آگاہی ہو سکے۔ ان کا کہنا تھا کہ دشمنوں کے لیے پیغام ہے کہ ہمارے پیارے نبی حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ہمیں صلح جوئی، امن و سلامتی کا درس دیا ہے لیکن اگر ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو پھر دشمن کا نام تاریخ سے بھی مٹ جائے گا۔۔ پاکستان زندہ باد ۔۔مسلح افواج پائندہ باد۔