مقبول خبریں
راچڈیل، ساہیوال جیسے شہروں کے رشتے کو مثالی بنایا جائیگا: ممبر پنجاب اسمبلی ندیم کامران
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جرائم کی دنیا میں سرفہرست میکسیکو سے تابکاری مواد سے بھری اغوا ہونے والی وین دوروز بعدبرآمد
ہوئپوکسلا ... دنیا بھر میں منشیات فروشی اور قتل کی وارداتوں کی شرح میں نمبر ون میکسیکو سے اغوا ہونے والی تابکاری مواد سے بھری وین حکام نے عالمی طاقتوں کی مدد سے برآمد کرلی ہے۔ ڈرٹی بم میں استعمال ہونے والا تابکاری مادہ دو دن نامعلوم افراد کے قبضے میں رہا، ماہرین کا کہنا ہے کی ان مواد کے قریب رہنے والا شخص اسکی شعاعوں سے ضرور متاثر ہوا ہوگا اسلئے انکی نظر ہر ہسپتال پر ہے کہ دیکھیں اس سے متاثرہ شخص تکلیف دہ موت سے پہلے کہاں آتا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ تابکار مادہ کوبالٹ 60 اپنے حفاظتی خول سے نکال کر ویسے ہی چھوڑ دیا گيا تھا اور اس کی قربت میں رہنے کی وجہ سے چوروں کی جان کو خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔ چور اس مادے سے خارج ہونے والی تابکاری کی زد میں آئے ہوں گے لیکن مقامی رہائشیوں کی صحت کو اس سے کوئی خطرہ لاحق نہیں۔ میکسیکو کے نیشنل جوہری سکیورٹی کمیشن (این این ایس سی) کے حکام نے بتایا کہ یہ تابکار مادہ ہوئپوکسلا شہر کے پاس ملا اور یہ اس جگہ سے بمشکل دو کلو میٹر کے فاصلے پر تھا جہاں سے ٹرک چوری ہوا تھا۔ تابکار مادہ اپنے کنٹینر سے باہر 500 سے 700 میٹر کی دوری پر پڑا ہوا تھا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اسے جس کسی نے کھولا تھا اس کی موت واقع ہو سکتی ہے کیونکہ اس مادے کی تابکار شدت بہت زیادہ تھی۔ اب وہ تابکار مادہ حکام کی تحویل میں ہے اور فوج نے اس علاقے کا محاصرہ کر رکھا ہے۔ ین الاقوامی جوہری توانائی کے ادارے آئي اے ای اے نے اس مادے کو انتہائی خطرناک قرار دیتے ہوئے خدشہ ظاہر کیا تھا کہ اس کا استعمال کسی قسم کے ڈرٹی بم کی تیاری کے لیے کیا جا سکتا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ یہ چوری بظاہر موقعے کا فائدہ اٹھانے کا معاملہ دکھائی دیتا ہے جو الٹا چوروں کے گلے پڑ گیا۔ کوبالٹ 60 کا استعمال کینسر کے علاج میں ہوتا ہے اور اسے میکسیکو کے شمالی شہر تیہوانا کے ہسپتال سے دارالحکومت کے قریب ایک ڈسپوزل مرکز لایا جا رہا تھا۔ لیکن یہی مواد اگر منفی استعمال میں آئے تو اس سے درٹی بم بنایا جا سکتا ہے اسی خدشے کے تحت پورے علاقے کو ہائی الرٹ کردیا گیا تھا۔