مقبول خبریں
بین الاقوامی میڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کی کلی کھول دی ہے:سردار مسعود خان
ڈیبی ابراھم کی قیادت میں ممبران پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کی لارڈ طارق احمد سے ملاقات
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کی وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور شاہ غلام قادر سے ملاقات
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
9ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے باہر بھرپور مظاہرہ کرینگے:راجہ نجابت حسین
سوچنے کے موسم میں سوچنا ضروری ہے!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک حق خودارادیت کے زیر اہتمام کشمیر کانفرنس، برطانوی و یورپی ممبران پارلیمنٹ کی شرکت
بریڈ فورڈ (بیورو روپورٹ) جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام بریڈ فورڈ سٹی ہال میں کشمیر کانفرنس کا انعقاد، کشمیر کانفرنس میں برطانوی و یورپی پارلیمنٹ کے ممبران، کونسلرز، برطانیہ بھر سے مندوبین اور سینئر صحافیوں نے خصوصی شرکت کی۔ کانفرنس کے مہمان خصوصی یورپی پارلیمنٹ میں فریندز آف کشمیر کے شریک چئیرمین ایم ای پی رچرڈ کوربٹ اور سینئر پاکستانی صحافی حامد میر تھے۔ کانفرنس کی صدارت جموں و کشمیر حق خود ارادیت کے چئیرمین راجہ نجابت حسین نے کی۔کشمیر کانفرنس میں مقررین نے کشمیر کی صورتحال اور سفارتی سطح پر اقدامات کے حوالے سے گفتگو کی۔ اس موقع پر فرینڈز آف کشمیر کے شریک چیئرمین ممبر یورپی پارلیمنٹ ایم ای پی رچرڈ کوربٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں تشویش ناک ہیں۔ عالمی اداروں کو خطہ میں اور مسائل کے حل کے لیے اقدامات اٹھانا ہوں گے۔ ایم ای پی رچرڈ کوربٹ نے اعلان کیا کہ مسئلہ کشمیر پر بحث کے لیے دیگر ممبران ایم ای پی اینتھیا میکنٹائر، ایم ای پی شفاق محمد،ایم ای پی فلپ بینئن اور دیگر ممبران یورپی پارلیمنٹ میں قرارداد جمع کرا دی ہے۔ ستمبر کے تیسرے ہفتے میں یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر پر بحث کا امکان ہے۔ اس موقع پر پاکستان کے سینئر صحافی اینکر پرسن حامد میر نے خطاب کرتے ہوئے شرکاء کو کشمیر کی موجودہ صورتحال سے آگاہ کیا اور بھارت کی جانب سے ایل او سی پر آزاد کشمیر کے سویلین کو نشانہ بنانے پر بھی بات کی۔ حامد میر نے کہا کہ ڈائس پورہ کی کشمیری و پاکستانی کمیونٹی کے کشمیر کے حوالے سے کردار کو سراہاتے ہوئے کہا کہ برطانوی سیاسی پارٹیوں اور لیڈران اور پارلیمنٹ کے ممبران کو لابی کرتے ہوئے کشمیر کے حوالے سے انہیں حمایت کے لیے آمادہ کرنا انتہائی خوش آئند ہے۔ کانفرنس کے صدر چیئرمین راجہ نجابت حسین نے شرکاء کو برطانیہ و یورپ میں ماضی قریب اور مستقبل میں ہونے والی سرگرمیوں، خصوصی اقدامات سے آگاہ کیا۔ راجہ نجابت حسین نے شرکاء کو بتایا کہ تحریک حق خود ارادیت نے ایک کشمیر پٹیشن کے لیے دستخطی مہم شروع کر رکھی ہے جو برطانوی پارلیمنٹ میں آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ کی چئیر پرسن ایم پی ڈیبی ابراہم کی قیادت میں تحریکی عہدیداران و خواتین برطانوی وزیر اعظم کو پیش کریں گے۔ اس پٹیشن پر زیادہ سے زیادہ ممبران پارلیمنٹ، کونسلرز، مقامی سیاسی رہنماء، کمیونٹی لیڈران کے دستخطوں کے لیے مہم جاری ہے۔ لندن اور برسلز میں کشمیر لابی کے علاوہ خواتین کی کانفرنسز اور10ڈاؤننگ سٹریٹ میں خواتین کے مظاہرے کابھی انعقاد کیا جا رہا ہے۔برطانیہ بھر میں تحریک حق خود ارادیت خواتین، نوجوانوں او ر کونسلرز کی کانفرنسز منعقد کرے گی۔کانفرنس سے لیبر پارٹی کے شیڈو وزیربرائے انصاف بیرسٹر عمران حسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں بھارت کی جانب سے کرفیو اور بھارتی فورسز میں اضافہ سے کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کا خدشہ ہے۔ ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔ کانفرنس سے لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کے ممبر یورپی پارلیمنٹ ایم ای پی شفاق محمد نے کہا ہے کہ بھارت اور پاکستان کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کی دونوں رپورٹس میں دی گئی سفارشات پر فوری عمل کرنا چاہئے۔ ایم ای پی شفاق محمد نے کہا کہ میں یورپی پارلیمنٹ سمیت ہر سطح پر کشمیر کے مسئلہ کے حل کے لیے کام کروں گا۔ اپنی پارٹی لبرل ڈیموکریٹک پارٹی میں بھی کشمیر کو پالیسی کا حصہ بنانے کے لیے بھی پارٹی میں کوشش کروں گا۔ لیبر پارٹی کی مرکزی ایگزیکٹو کونسل کی ممبر وتحریک حق خود ارادیت برطانیہکی چیئر پرسن کونسلر یاسمین ڈار نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم برطانوی پارلیمنٹ کشمیر لابی کے علاوہ 3 ستمبر کو 10ڈاؤننگ سٹریٹ کے سامنے مظاہرہ کریں گے۔ ہم برطانیہ بھر میں خواتین کو متحرک کر کے اپنے اس کاز کے لیے ساتھ ملائیں گے۔ لیبر پارٹی کی مرکزی انٹرنیشنل پالیسی کمیٹی کے ممبر وتحریک حق خود ارادیت کے سیکرٹری جنرل محمد اعظم نے خطاب کرتے ہوئے ہم لیبر پارٹی کی سطح کے مختلف حلقوں میں یہ کوشش کر رہے ہیں کہ لیبرپارٹی کی سالانہ کانفرنس میں اور نیشنل سطح پر کشمیر قرارداد پاس کی جائے اور اسے قومی پالیسی کا حصہ بنایا جائے۔ حکمران جماعت کنزرویٹو پارٹی کے سابق ممبر یورپی پارلیمنٹ امجد بشیر اور ہیری بوتا نے یہ عزم کیا کہ ہم حکومت کے ساتھ بھی اور اپنی پارٹی میں بھی کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کرنے کے ساتھ ساتھ اقدامات اٹھانے کے لیے کوشش کریں گے۔ اس موقع پر کانفرنس سے سردار عبدا لرحمن خان، نائلہ شریف،کونسلر صبیحہ خان،چوہدری مظہر حسین، کونسلر کنیز اختر، کونسلر کامران حسین، سابق لارڈ مئیر بریڈ فورڈ راجہ غضنفر خالق، چوہدری رنگ زیب، کونسلر خادم حسین، کونسلر عابد حسین، کونسلر ارشد حسین، کونسلر نسیم اختر، کونسلر نوید ریاض، سابق پارلیمنٹری امیدوار محمد ریاض، سابق کونسلر سحر خا ن، محترمہ مدیحہ انصاری، مس سندیس آف لیڈز، سابق ممبر آف برٹش یوتھ پارلیمنٹ مزدلفہ احمد، ممبر برٹش یوتھ پارلیمنٹ ارقم الحدید،مسز عترت علی، مس غزل انصاری سمیت برطانی بھر سے بڑی تعداد میں کونسلر، کمیونٹی رہنماؤں نے خطاب کرتے ہوئے کشمیریوں کا ہر سطح پر ساتھ دینے کا عزم کیا۔مقررین نے معروف کشمیری رہنماء راجہ نجابت حسین نے کی برطانیہ، یورپ اور دنیا بھر میں مسئلہ کشمیر کے لیے انتھک کوششوں اور حق خود ارادیت کے لیے کام کرنے پر خرا ج تحسین پیش کیا۔ اس موقع پر تمام شرکاء نے تحریک حق خود ارادیت کی کشمیر پٹیشن پر دستخط کیے اورآمدہ تمام سرگرمیوں میں تعاون اور شرکت کی یقین دہانی کرائی۔ تمام شرکاء نے کشمیر کے جھنڈے اور تحریک حق خود ارادیت کے بینرز و کتبے اٹھا رکھے تھے۔ کانفرنس کے اختتام پر معروف ٹیوی اینکر نے سٹی ہال کے باہر کشمیر کے حوالے سے اپنا پروگرام ریکارڈ کیا۔