مقبول خبریں
چوہدری بشیر رٹوی کی ربیکا لانگ بیلی سے ملاقات،مقبوضہ کشمیر بارے یاداشت پیش کی
بھارتی ظلم و جبر؛ برطانیہ کے بعد امریکی اخبارات میں بھی مسئلہ کشمیر شہہ سرخیوں میں نظر آنے لگا
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مودی کا دورہ فرانس، کشمیری و پاکستانی پیرس میں احتجاج کریں:جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت
وہ جو آنکھ تھی وہ اجڑ گئی ،وہ جو خواب تھے وہ بکھر گئے
پکچرگیلری
Advertisement
کاروباری شخصیت چوہدری شہزاد کا نامور صنعت کار نسیم نیاز،رانا امتیاز کے اعزاز میں عشائیہ
اولڈہم (محمد فیاض بشیر)پاکستان اور برطانیہ کے درمیان تجارت کے فروغ اور سرمایہ کاری کے لیے قائل کرنے کیلئے نامور صنعت کار نسیم نیاز اور رانا امتیاز ان دنوں برطانیہ کے دورہ پر ہیں۔ اولڈہم کے ٹیمپٹ ایشین ریسٹورنٹ میں کاروباری و سماجی شخصیت چوہدری شہزاد نے عشائیہ دیا ۔باہمی دلچسپی کے امور اور دونوں ممالک کے درمیان سرمایہ کاری کے فروغ پر سیر حاصل گفتگو بھی کی گئ۔ سابق مئیر کونسلر جاوید اقبال، کاروباری شخصیات سیلمان جاوید، شاہد رفیق، عرفان حنیف، نوجوان رانا علی احمد، ارباز محمد نے بھی عشائیہ میں شرکت کی اور نوجوان نسل کو برطانیہ اور پاکستان میں سرمایہ کاری بارے آگاہی دی۔اس موقع پر سابق مئیر کونسلر جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ ہمارے سرمایہ کار مہمانان باعث فخر ہیں جو برطانیہ کے ساتھ پاکستان میں بھی سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔ان کا مذید کہنا تھا کہ کمیونٹی کے دیگر سرمایہ کاروں کو بھی برطانیہ اور پاکستان میں سرمایہ کاری کرنی چاہیے اور مل جل کر آگے بڑھنا چاہیے۔ پاکستان سے آئے صنعت کار نسیم نیاز کا کہنا تھا کہ میری پاکستانی کمیونٹی سے درخواست ہے کہ وہ پاکستان جا کر وہاں سرمایہ کاری کریں۔ رانا امتیاز احمد کا کہنا تھا میں برطانیہ میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کو بتانا چاہتا ہوں اس وقت پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے حالات سازگار ہیں اور میں نے خود پاکستان میں سرمایہ کاری کی ہوئی ہے جسے مجھے کافی فائدہ حاصل ہوا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت بھی بیرون ممالک بسنے والے پاکستانیوں کو مادر وطن میں سرمایہ کاری کے لیے کافی سہولیات دے رہی ہے اسکا بھرپور فائدہ اٹھانا چاہیے۔ پاکستان سے آئے صنعت کار سیلمان جاوید کا کہنا تھا کہ ہم برطانیہ کے دورے پر آئے ہوئے ہیں تاکہ یہاں کے سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے قائل کر سکیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری سے وہاں لوگوں کے لیے روزگار کے مواقع میسر آئیں گے اور ملکی معیشت مضبوط ہو گی۔ نوجوان علی احمد کا کہنا تھا کہ کہ پاکستانی نژاد برطانوی شہری پاکستان اور برطانیہ کے درمیان سرمایہ کاری کو فروغ دیں ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ ہم پاکستان اور برطانیہ کے درمیان تجارتی روابط پر مکمل یقین رکھتے ہیں ۔ عشائیہ کے میزبان چوہدری شہزاد کا کہنا تھا کہ ہمارے کاروباری دوست پاکستان سے برطانیہ اور برطانیہ سے پاکستان میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں میں اپنے دوستوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے میری دعوت کو قبول کیا اور ہمارے درمیان باہمی دلچسپی کے امور پر موثر بات چیت ہوئی۔