مقبول خبریں
مدر فائونڈیشن گوجرخان کے روح رواں راجہ عرفان کی برطانیہ آمد پر انکے اعزاز میں استقبالیہ
ماحولیاتی آلودگی کے باعث بچہ ماں کے رحم میں مر جاتا ہے یا اسکی افزائش رک جاتی ہے: ایک تحقیق
پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری محمد رضا کی زیر صدارت عہدیداران و کارکنان کا اجلاس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
پروفیٹک گفٹس ویڈنگ اینڈ ایونٹس آرگنائزر کے زیر اہتمام ایشین ویڈنگ اینڈ پلانرز ایونٹ کا انعقاد
میرے تمام خواب نظاروں سے جل گئے
پکچرگیلری
Advertisement
روٹری کلب کے راہنما ڈاکٹر سہیل قریشی کے اعزاز میں سماجی کمیونٹی شخصیت چوہدری محمود کا استقبالیہ
راچڈیل (محمد فیاض بشیر)پاکستان کے شہر ساہیوال سے آئے روٹری کلب کے سنئیر راہنما ڈاکٹر سہیل قریشی کے اعزاز میں سماجی کمیونٹی شخصیت چوہدری محمود نے ایک استقبالیہ دیا جس میں راچڈیل کے سابق مئیر کونسلر محمد زمان، کونسلر سلطان، پاکستان کی نامور کاروباری شخصیت اسد خان ملک فہد و دیگر نے شرکت کی۔ راچڈیل اور ساہیوال کے جڑواں شہر کی حیثیت کو مذید ٹھوس اور مؤثر بنانے بارے مستقبل کے لائحہ عمل پر بات چیت کی گئی۔ اس موقع پر پاکستان سے آئے مہمان ڈاکٹر سہیل قریشی کا کہنا تھا کہ ساہیوال، راچڈیل کے ساتھ جب سے جڑواں شہر کا درجہ ملا تھا اس وقت سے گہرا رشتہ وابستہ ہے اپنی پیشہ ورانہ ذمہ داریوں کی وجہ سے کچھ عرصہ فعال کردار ادا نہ کر سکا لیکن اب دوبارہ دونوں شہروں کے درمیان تعلقات کے فروغ اور باہمی دلچسپی کے امور پر اپنا کردار ادا کروں گا۔ سابق مئیر کونسلر محمد زمان کا کہنا تھا کہ اس ملاقات کا مقصد جڑواں شہر کے رشتے کو مضبوط بنانے بارے مشترکہ لائحہ عمل اپنانا تھا ۔ کونسلر سلطان کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر سہیل قریشی ساہیوال کی نامور اور معتبر شخصیت ہیں اور جڑواں حیثیت کا درجہ 1989 سے حاصل ہے اب ڈاکٹر سہیل سے امیدیں وابستہ ہیں امید ہے انکی کاوشوں سے ایک نئے دور کا آغاز ہو گا میں خود بھی ساہیوال ورکنگ پارٹی کا چیئرمین ہوں۔ ملک فہد کا کہنا تھا کہ انکا تعلق بھی ساہیوال سے ہے اور وہ راچڈیل ساہیوال کے درمیان باہمی دلچسپی کے تمام امور پر ایک دوسرے سے استفادہ حاصل کرنے کے خواہاں ہیں ۔ پاکستان سے آئی ممتاز کاروباری شخصیت اسد خان کا کہنا تھا کہ میں خود بھی روٹرین رہا ہوں اور ڈاکٹر سہیل روٹرین کے ساتھ ڈپٹی گورنر بھی ہیں ان کا کہنا تھا کہ حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتا ہوں کہ برطانیہ میں تعینات ویلفیئر تجارتی اتاشی کو سرگرم کریں تاکہ برطانیہ اور پاکستان کے درمیان تجارت کو فروغ ملے برطانیہ میں بسنے والے پاکستانی ہر سال پاکستان میں بارہ سے چودہ ارب ڈالر کا زرمبادلہ بھیجتے ہیں اس سے مذید فائدہ بھی اٹھایا جا سکتا ہے ۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ وہ راچڈیل کونسل اور روٹرین کلب ساہیوال سے درخواست کریں گے کہ وہ صوابی میں ایک رفاعی ادارے کے لیے ائیر ایمبولینس فراہم کرنے کے لیے کوشاں ہیں اس سلسلے میں مدد فراہم کی جائے تاکہ اس پسماندہ علاقے کے لوگ فائدہ اٹھا سکیں۔ میزبان چوہدری محمود نے ڈاکٹر سہیل قریشی اور دیگر مہمانوں کا دلی شکریہ ادا کیا اور اس بات کا اعادہ کیا کہ راچڈیل اور ساہیوال کے باہمی دلچسپی کے امور پر تیزی سے کام کیا جائے گا۔