مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
lets talk گروپ کے زیر اہتمام کمیونٹی کو ذہنی امراض کی آگاہی کے لیے ورکشاپ کا انعقاد
راچڈیل (محمد فیاض بشیر)راچڈیل کے مقامی کمیونٹی سنٹر میں lets talk گروپ نے کمیونٹی کو ذہنی امراض کی آگاہی کے لیے ایک ورکشاپ کا انعقاد کیا جس میں ذہنی امراض کے ماہر ڈاکٹروں نے کمیونٹی کو مفید معلومات دیں۔ورکشاپ میں سابق مئیر کونسلر محمد زمان، گروپ کی اہم رکن حمیرا حقانی، کئیرنگ اینڈ شئیرنگ گروپ سے نکی، شبانہ، طاہر بشیر، عاصمہ اعوان، شبنم کے علاوہ کمیونٹی کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔اس موقع پر سابق مئیر کونسلر محمد زمان کا کہنا تھا کہ ذہنی امراض کے شکار افراد کو فی الفور پیشہ ور ماہرین کی خدمات حاصل کرنی چاہیئں۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ اس بارے کمیونٹی کو زیادہ آگاہی دینے کی ضرورت ہے تاکہ مرض بڑھنے سے پہلے اسکا علاج ہو سکے۔ حمیرا حقانی کا کہنا تھا کہ اس ورکشاپ میں ہم نے کمیونٹی کو ذہنی مرض سے نبٹنے بارے بتایا ہے اور ذہنی امراض کے ماہر معالجوں نے کمیونٹی کو انتہائی مفید و مؤثر معلومات فراہم کی ہے ۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ کمیونٹی کی خدمت کے لیے وہ مستقبل میں بھی ذہنی امراض اور دیگر سماجی مسائل بارے ایسے پروگرام کا انعقاد کروائیں گی۔ شبنم کا کہنا تھا کہ اس طرح کے معلوماتی پروگرام کا انعقاد تواتر سے ہونا چاہیے۔ کئیرنگ اینڈ شئیرنگ گروپ کی نکی کا کہنا تھا کہ کمیونٹی کے جو لوگ ذہنی مرض میں مبتلا ہیں ان سے درخواست ہے کہ وہ اس بارے ڈاکٹر سے بات چیت کریں ۔ محمد طاہر بشیر کا کہنا تھا کہ حمیرا حقانی نے ورکشاپ کا انعقاد کر کے کمیونٹی کو مفید مشورے دیے ہیں اور کمیونٹی کے ذہنی امراض میں مبتلا افراد پر بات چیت کی اور ڈاکٹروں نے مفید مشورے دیے۔ شبانہ کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں بسنے والی اقلیتی کمیونیٹیز کے لیے ذہنی امراض بارے آگاہی دینے اور بروقت علاج کروانے بارے انتہائی مفید معلومات دی گئ اور اس لحاظ سے ورکشاپ بے حد کامیاب رہی ۔ ورکشاپ میں کمیونٹی کی کثیر تعداد میں شرکت اس بات کی غمازی کرتی ہے کہ لوگ اپنے مسائل بارے پیشہ ورانہ خدمات حاصل کرنے بارے سنجیدہ ہیں ۔