مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
ڈاکٹر رضا علی عابدی کی زیر صدارت بزمِ اردو لندن کے زیرِ اہتمام سالانہ مشاعرہ کا انعقاد
لندن(عمران راجہ) بزمِ اردو لندن کے زیرِ اہتمام ومبلڈن ، لندن میں ایک شاندار سالانہ مشاعرہ کا انعقاد ہوا۔مشاعرہ کے مہمانِ خصوصی ہندوستان سے تشریف لائے میگدھ یونیورسٹی کے شعبہ اردو کے سابق صدر پروفیسر محفوظ الحسن جبکہ مشاعرہ کی صدرات مشہور براڈ کاسٹر اور ادیب ڈاکٹر رضا علی عابدی نے کی۔بزمِ اردو لندن کے معتمد اور مشہور شاعر غالب ماجدی نے تقریب کا آغاز کیا اور اسٹیج پرمہمانِ خصوصی اور صدر کے علاوہ برطانیہ کے عظیم و بزرگ شعرا کرام جناب ناظر فاروقی، محترمہ نجمہ عثمان اور محترم عقیل دانش کو مدعو کیا ۔ مشاعرہ کی نظامت کی ذمہ داری بزمِ سخن کے منتظمِ اعلی سہیل ضرار خلش کو سونپی گئی۔پروگرام کا باقاعدہ آغاز تلاوتِ کلامِ پاک سے ہوا جس کی سعادت غالب ماجدی کے پوتے عمر غالب نے حاصل کی۔ نعت رسولِ مقبول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہندوستان سے تشریف لائے شاعر محترم الوک کمار شریواستو شاز جہانی نے پیش کی ۔مشاعرہ میں جن شعرا ء کرام نے اپنا کلام پیش کیا ۔اُن میں سہیل ضرار خلش، سید شان کانپوری، سید کامران زبیر کامی، محترمہ گل زیب زیبا، علامہ عادل فاروقی، الوک کمار شاز جہانی، محترمہ عروج آصف ، ڈاکٹر ہلال فرید ، عابد علی بیگ ، غالب ماجدی ، ناظر فاروقی، محترمہ نجمہ عثمان اور جناب عقیل دانش شامل تھے۔ اس کے علاوہ مہمانِ خصوصی پروفیسر محفوظ الحسن اور صدرِ محفل ڈاکٹر رضا علی عابدی نے بھی اپنے مختصر خطابات میں اردو زبان کے حوالے سے بزم اردو کی خدمات کو سراہا ۔اس تقریب میں بزمِ اردو لندن کے جانب سے شعرا اور ادیبوں میں تعریفی اسناد و شیلڈز بھی دی گئیں۔