مقبول خبریں
بین الاقوامی میڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کی کلی کھول دی ہے:سردار مسعود خان
ڈیبی ابراھم کی قیادت میں ممبران پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کی لارڈ طارق احمد سے ملاقات
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کی وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور شاہ غلام قادر سے ملاقات
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
9ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے باہر بھرپور مظاہرہ کرینگے:راجہ نجابت حسین
سوچنے کے موسم میں سوچنا ضروری ہے!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
اولڈہم کونسل کے انتخابات میں کونسلرز محمد الیاس، نائلہ ابراہیم اور کونسلر مئیر جاوید اقبال کامیاب
اولڈہم (محمد فیاض بشیر)برطانیہ میں ہونے والے لوکل کونسل کے انتخابات میں بڑے بڑے برج الٹ گئے۔ عوام نے حکمران جماعت کنزرویٹو اور اپوزیشن جماعت لیبر پارٹی کو بریگزیٹ بارے واضع موقف نہ اپنانے پر آڑے ہاتھوں لیا اور پولنگ کی شرح حیران کن طور پر انتہائی کم رہی جو سیاسی جماعتوں کے لیے لمحہ فکریہ ہے ۔ اولڈہم کونسل کے نو منتخب مئیر الیکشن ہار گئے جس سے لیبر پارٹی کو سیاسی طور پر سخت دھچکا لگا۔ اولڈہم کونسل کے انتخابات میں موجودہ مئیر کونسلر جاوید اقبال سخت مقابلہ کے بعد مدمقابل آزاد امیدوار اصغر علی سے صرف چند سو ووٹوں کے فرق سے جیتے جسکی سب سے بڑی وجہ لیبر پارٹی کے کونسلرز کی جماعتی اُمیدواروں کے خلاف اندرون خانہ سخت انتخابی مہم تھی۔ میڈلاک ویل وارڈ کی نمائندگی کرنے والے کونسلر قیصر رحمٰن جنکو لیبر پارٹی نے ڈسپلن کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جماعت سے فارغ کر دیا تھا لیبر پارٹی کے ٹکٹ پر انتخاب میں حصہ لینے والے محمد الیاس کے خلاف الیکشن لڑا لیکن قسمت کی دیوی ان پر مہربان نہ ہو سکی یوں محمد الیاس کونسلر منتخب ہو گئے۔ سینٹ میری وارڈ سے کونسلر شاداب قمر کی چھوڑی نشست پر انتہائی متحرک سماجی اور کمیونٹی شخصیت نائلہ ابراہیم بھاری اکثریت سے جیت گئیں ۔اس موقع پر مئیر کونسلر جاوید اقبال نے کہا کہ مئیر کی ذمہ داریوں کی وجہ سے انکے لیے یہ سال سیاسی لحاظ سے مشکل تھا لیکن میں کمیونٹی کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے ایک دفعہ پھر اعتماد کر کے کونسلر منتخب کیا مئیر کی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہو کر ایک بار پھر حلقہ کی عوام کے لیے کام کروں گا ۔ نومنتخب کونسلر محمد الیاس نے کہا کہ کامیابی کارکنان اور جماعت کے لیڈران کی انتخابی مہم اور والدہ کی دعاؤں کی وجہ سے ممکن ہوئ میری کوشش ہو گی کہ جو اعتماد حلقہ کی عوام نے مجھ پر کیا ہے اس پر پورا اترنے کے لیے کوئ بھی کوتاہی نہ کروں مجھے اسکے لیے سینئر راہنماؤں اور کمیونٹی کو میری معاونت کرنی ہو گی۔ پہلی دفعہ الیکشن میں حصہ لیکر منتخب ہونے والی سماجی کمیونٹی کی ہر دلعزیز شخصیت نائلہ ابراہیم کا کہنا تھا کہ سخت محنت لگن ساتھیوں کی سخت محنت اور جماعت کی ٹھوس سیاسی حکمت عملی کی وجہ سے ایسا ممکن ہوا۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ وہ پاکستانی وکشمیری کمیونٹی کی خواتین کے مسائل حل کرنے اور انہیں انکا حق دلوانے کے لیے کام کریں گی تاکہ خواتین معاشرے میں نمایاں کردار ادا کر سکیں۔ کونسلرز عتیق الرحمان اور محمد شعیب نے نو منتخب کونسلرز اور دوبارہ منتخب ہونے والے کونسلرز کی کامیابی کو لیبر پارٹی کی فتح قرار دیا اور کہا کہ عوام نے فیصلہ دے دیا ہے کہ کنزرویٹو پارٹی کی لوکل کونسلز کی فنڈنگ میں کٹوتی نامنظور ہے اب بریگزیٹ اور فنڈنگ میں کٹوتی کی وجہ سے ان کا جانا ٹھہر گیا ہے۔