مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سنجیدہ اقوام پڑوسی ممالک کے ساتھ تنازعات طے کرکے بڑے بلاک بنارہی ہیں: سردار شوکت کشمیری
جنیوا ... مسئلہ کشمیر کا پرامن حل نہ صرف کشمیریوں کے لئے اہم ہے بلکہ اس سے جنوبی ایشیا کے خطے کے تمام ممالک میں امن وآشتی کو فروغ حاصل ہوگا۔ کشمیری آج تک اسی امن کے قیام کیلئے خاموش جدوجہد میں مصروف ہیں لیکن اقوام عالم کو ان کا پیمانہ صبر لبریز ہونے سے پہلے اس کا ادراک کرلینا چاہیئے۔ ان خیالات کااظہار متحدہ کشمیر پیپلزنیشنل پارٹی کے جلا وطن چیئرمین سردار شوکت علی کشمیری نے اخباری نمائندوں کے ساتھ گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ جنگ وجدل کے ذریعے مسئلہ کشمیر کے حل کے سپنے دیکھنے والے ناعاقبت اندیش ہیں۔ تاریخ شاہد ہے کہ جنگ وجدل نے قوموں اور انسانوں کو تباہی وبربادی سے دوچار کیااور مزید مسائل کو جنم دیا ہے، ترقی یافتہ، باوقار اور سنجیدہ اقوام پڑوسی ممالک کے ساتھ تنازعات طے کرکے بڑے بڑے بلاک بنارہے ہیں۔سردار شوکت علی کشمیری نے کہا کہ دوسری جنگ عظیم کے دوران جرمنی فرانس اور دیگر یورپین ممالک جو کہ ایک دوسرے کے خون کے پیاسے تھے، اب تمام تنازعات کو حل کرکے ایک یونین بنا سکتے ہیں تو ایسے میں پاکستان ہندوستان اور چین کو چاہیے کہ تنازعات کو مذاکرات کے ذریعے حل کرائیں۔