مقبول خبریں
اولڈہم ہوپ ووڈ ہاؤس ہیلتھ سنٹر میں خواتین کو آگاہی دینے کیلئے لیڈی ہیلتھ ڈے کا اہتمام
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
تحریک کشمیر ڈنمارک کے زیر اہتمام کوپن ہیگن میں اظہار یکجہتی کشمیر کانفرنس کا انعقاد
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
کشمیر‘ جہاں خواب بھی آنسو کی طرح ہیں!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سنجیدہ اقوام پڑوسی ممالک کے ساتھ تنازعات طے کرکے بڑے بلاک بنارہی ہیں: سردار شوکت کشمیری
جنیوا ... مسئلہ کشمیر کا پرامن حل نہ صرف کشمیریوں کے لئے اہم ہے بلکہ اس سے جنوبی ایشیا کے خطے کے تمام ممالک میں امن وآشتی کو فروغ حاصل ہوگا۔ کشمیری آج تک اسی امن کے قیام کیلئے خاموش جدوجہد میں مصروف ہیں لیکن اقوام عالم کو ان کا پیمانہ صبر لبریز ہونے سے پہلے اس کا ادراک کرلینا چاہیئے۔ ان خیالات کااظہار متحدہ کشمیر پیپلزنیشنل پارٹی کے جلا وطن چیئرمین سردار شوکت علی کشمیری نے اخباری نمائندوں کے ساتھ گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ جنگ وجدل کے ذریعے مسئلہ کشمیر کے حل کے سپنے دیکھنے والے ناعاقبت اندیش ہیں۔ تاریخ شاہد ہے کہ جنگ وجدل نے قوموں اور انسانوں کو تباہی وبربادی سے دوچار کیااور مزید مسائل کو جنم دیا ہے، ترقی یافتہ، باوقار اور سنجیدہ اقوام پڑوسی ممالک کے ساتھ تنازعات طے کرکے بڑے بڑے بلاک بنارہے ہیں۔سردار شوکت علی کشمیری نے کہا کہ دوسری جنگ عظیم کے دوران جرمنی فرانس اور دیگر یورپین ممالک جو کہ ایک دوسرے کے خون کے پیاسے تھے، اب تمام تنازعات کو حل کرکے ایک یونین بنا سکتے ہیں تو ایسے میں پاکستان ہندوستان اور چین کو چاہیے کہ تنازعات کو مذاکرات کے ذریعے حل کرائیں۔