مقبول خبریں
روٹری کلب کے راہنما ڈاکٹر سہیل قریشی کے اعزاز میں سماجی کمیونٹی شخصیت چوہدری محمود کا استقبالیہ
پاکستان سے آئے وکلا کے اعزاز میں ورلڈ وائیڈ سالیسٹرز کے ڈائیریکٹر محمد اشفاق کا استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
سابق صدر پی ٹی آئی یارکشائر اینڈ ہمبر ریجن طاہر ایوب خواجہ کا اپنی رہائش گاہ پر محفل کا انعقاد
بے نظیر بھٹو: چراغ بجھ گیا لیکن روشنی زندہ ہے
پکچرگیلری
Advertisement
وزیراعظم عمران خان ملکی ترقی کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں،شہزاد چوہدری ، یاسر چوہدری
مانچسٹر (محمد فیاض بشیر)وزیراعظم پاکستان عمران خان نے جب سے اقتدار سنبھالا ہے مادر وطن سے غربت ،جہالت کے خاتمہ۔ تباہ حال قومی اداروں کے اندر اصلاحات لانے اور پچھلی حکومتوں کی طرف سے دیوالیہ پن کے دہانے پر چھوڑی معیشت کو استحکام کی طرف لانے کے لیے مسلم دوست ممالک سے ان مشکل ترین حالات میں معاشی بحران پر قابو پانے کے لیے دن رات کام کر رہے ہیں اور اب انہوں نے غریب افراد کی حالت بہتر بنانے کے لیے غربت مٹاؤ سکیم کا اعلان کر کے جماعتی منشور کی جانب قدم رکھ دیا ہے جو کہ ایک انتہائی احسن اقدام کے ساتھ نئے پاکستان کا آغاز ہے اسکی راہ میں پچھلے بہتر سال سے عیاشیاں کرنے والے حکمران، بیوروکریسی اور دیگر متعلقہ ادارے رکاوٹیں حائل کرنے کی ناکام کوشش میں مصروف عمل ہیں لیکن انہیں جان لینا چاہیے کہ ہمارے قائد اور سچے محب وطن پاکستانی وزیراعظم عمران خان ایک چٹان ہیں جب وہ کسی بات کا مصمم ارادہ کر لیں تو پھر وہ اپنی منزل مقصود پا کر ہی دم لیتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار تحریک انصاف برطانیہ کے سابق جنرل سیکرٹری شہزاد چوہدری اور نوجوان متحرک راہنما یاسر چوہدری نے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے شروع کیے گئے غربت مٹاؤ پروگرام کے بعد میڈیا کو دیے گئے اپنے ایک بیان میں کیا۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ اس وقت تحریک انصاف کی حکومت پاکستان میں مشکل حالات سے گزر رہی ہے لیکن اس سال کے آخر تک عوام کو حقیقی تبدیلی کے آثار واضح نظر آنا شروع ہو جائیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ قیام پاکستان کے بعد سے لیکر اب تک پہلی دفعہ ایسا ہوا ہے کہ حکومت ، اکثریتی بیوروکریسی، مسلح افواج ، ایجنسیاں، اور دیگر متعلقہ ادارے ایک ہی سوچ رکھتے ہیں اور وہ صرف پاکستان کو ترقی کی جانب لے جانے کی ہے ان مثالی تعلقات اور باہمی ہم آہنگی سے سیاسی قائدین اور کئ دیگر افراد کو پیٹ میں مروڑ پڑتے ہیں کیونکہ وہ تقسیم کرو اور حکمرانی کرو مال بناؤ کی پالیسی کے پیروکار تھے اب اتنی بڑی تبدیلی ہضم ہونے کا نام نہیں لیتی۔ دونوں راہنماؤں کا کہنا تھا کہ ہم برطانیہ میں بسنے والے پاکستانی وکشمیری مادر وطن کی ترقی اور معیشت کو بہتر بنانے کیلئے آگے سے بھی بڑھ کر اپنا کردار ادا کرنے کے لیے تیار ہیں اسکے لیے ہماری جماعت کی حکومت کو بیرون ملک بسنے والوں کے مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنا ہو گا تاکہ ہم بلا خوف و خطر مادر وطن کی خدمت کر سکیں۔