مقبول خبریں
حاجی محمد شبیر کی رہائش گاہ پر روحانی محفل کا انعقاد، پیر ابو احمدمقصود مدنی کی خصوصی شرکت
بھارتی ہائی کمیشن کے باہر کشمیریوں کا احتجاجی مظاہرہ،لندن کی فضا آزادی کے نعروں سے گونج اٹھی
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
آل جموں کشمیر مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر راجہ اسحاق کالندن مظاہرے میں شرکت کا اعلان
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
پھر ہم نے وہ چراغ ہوا کو تھما دیا!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں پہلی دفعہ مڈلینڈزاور نارتھ ویسٹ ریجن میں سلام پاکستان فلم فیسٹیول کا فیصلہ
مانچسٹر (محمد فیاض بشیر)برطانیہ میں پہلی دفعہ ماہ مارچ میں مڈلینڈ اور نارتھ ویسٹ ریجن میں سلام پاکستان فلم فیسٹیول کا انعقاد ہونے جا رہا ہے جس میں پاکستانی دستاویزی فلموں کے ساتھ پہاڑی زبان میں ںنائ گئ فلم لکیر بھی دکھائی جائے گی جس سے پاکستان کی ثقافت اور مثبت تشخص اجاگر ہو گا۔ فیسٹول کی پہلی فلم song of Lahore جس کی ہدایتکار بین الاقوامی شہرت یافتہ آسکر ایوارڈ یافتہ شرمین عبید چنائے تھیں اور مقامی ہدایتکار انجم ملک کی مختصر دورانیہ کی دستاویزی فلم hidden heroes مانچسٹر کے مقامی سینما میں لگائ گئ بین الثقافتی کمیونٹی کے افراد نے شرکت کی۔ فیسٹیول کے مینجر عزیز زہریا کا کہنا تھا کہ انہیں بے حد خوشی ہے کہ پاکستانی فلمیں متعارف کروانے کا موقعہ ملا اس قسم کے فیسٹیول سے پاکستان کے مثبت تشخص کو اجاگر کرنے میں مدد ملے گی یہ اس جانب ایک چھوٹا سا قدم ہے ۔ پاکستانی ثقافت اور میوزک کی پرانی تاریخ ہے ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ ناصرف پاکستان فلم انڈسٹری میں اچھا کام ہو رہا ہے بلکہ برطانیہ میں بھی ہماری کمیونٹی میں ذہانت کی کمی نہیں اسکے ساتھ ہم مقامی افراد کے کام کو بھی سامنے لا رہے ہیں ہم مستقبل میں بڑا منصوبے کے لیے بھی پرعزم ہیں۔ مئیر راچڈیل کونسلر محمد زمان کا کہنا تھا کہ راچڈیل میں انگیز کمیونٹی کے پروگرام میں جاز میوزک پیش کیا گیا تو انہوں نے منتظمین کو کہا کہ اگر بین الثقافتی میوزک کو اجاگر کرنا اور کمیونٹی کے اندر ہم آہنگی پیدا کرنا چاہتے ہیں تو پھر طبلہ میوزک کو بھی شامل کریں۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ نوجوان نسل کو پاکستانی وکشمیری ثقافت سے جوڑے رکھنے کے لیے ایسے مذید فیسٹیول کا انعقاد ضروری ہےاور میں انتطامیہ کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ فلم دیکھنے کے لیے انگریز کمیونٹی سے تعلق رکھنے والی ایما مارٹن کا کہنا تھا کہ پاکستانی میوزک کو بین الاقوامی سطح پر پذیرائی ہوئی ہے۔ راجر کا کہنا تھا کہ پاکستانی میوزک قوالی سے پہچانا جاتا ہے لیکن اب کلاسیکل موسیقی سے لگن رکھنے والوں نے امریکہ میں جاز میوزک سے ملکر جو پرفارمینس دی ہے تو اس سے پاکستانی میوزک کو بین الاقوامی سطح پر مذید پذیرائی مل رہی ہے۔ بلوندر سنگھ کا کہنا تھا کہ جسطرح دو ملکوں کے میوزک ملکر پروگرام کر سکتے ہیں اسی طرح بحثیت انسان بھی ہم اکٹھے ہو سکتے ہیں۔ ۔ انجم ملک کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں سلام پاکستان فلم فیسٹیول کا انعقاد احسن اقدام ہے اور جو فلم دکھائی گئ ہے اس میں پاکستان کا مثبت تشخص اجاگر کیا گیا ہے۔ فلم فیسٹیول دیکھنے کے لیے آنے والوں نے اسے کمیونٹی کے درمیان باہمی ہم آہنگی پیدا کرنے کا سنہری موقع قرار دیا اور اس طرح کے مذید بین الثقافتی پروگراموں کے انعقاد پر زور دیا تاکہ کمیونٹی کے اتحاد و اتفاق محبت و یگانگت کو فروغ ملے اور ایک دوسرے کے قریب آنے کا موقع ملے۔