مقبول خبریں
حاجی محمد شبیر کی رہائش گاہ پر روحانی محفل کا انعقاد، پیر ابو احمدمقصود مدنی کی خصوصی شرکت
بھارتی ہائی کمیشن کے باہر کشمیریوں کا احتجاجی مظاہرہ،لندن کی فضا آزادی کے نعروں سے گونج اٹھی
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
آل جموں کشمیر مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر راجہ اسحاق کالندن مظاہرے میں شرکت کا اعلان
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
پھر ہم نے وہ چراغ ہوا کو تھما دیا!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
یو کے اسلامک مشن کا مدینہ مسجد کی ازسرنو تعمیر کیلئے مقامی ریسٹورنٹ میں سالانہ چیرٹی ڈنر کا اہتمام
مانچسٹر (محمد فیاض بشیر)عالمی سطح پر اگر اسلامی ممالک کے بعد کسی غیر اسلامی ملک میں مکمل مذہبی آزادی اور مساجد مدرسوں کی تعمیر ہو رہی ہے تو اس میں برطانیہ سر فہرست ہے اسکی بنیادی وجہ برطانوی معاشرے میں تمام مذاہب کو برابری کی سطح پر حقوق کا حاصل ہونا ہے۔ صنعتی شہر مانچسٹر میں یوکے اسلامک مشن کے تحت دینی خدمات کا کام بحسن طریقے سے سر انجام دینے میں مدینہ مسجد و کمیونٹی سنٹر پیش پیش ہے ۔ کمیونٹی کی ضروریات اور نمازیوں کی تعداد میں اضافہ کی وجہ سے مقامی انتظامیہ و کمیونٹی نے اسکی توسیع کے منصوبے پر کام شروع کر دیا اسی سلسلہ میں مقامی ریسٹورنٹ ہال میں ایک چیریٹی ڈنر کا انعقاد ہوا جس میں سیاسی سماجی اور کمیونٹی شخصیات نے شرکت کی۔ اس موقع پر ممبر برطانوی پارلیمنٹ و شیڈو وزیر افضل خان کا کہنا تھا کہ انہیں خوشی ہے کہ انکے حلقہ انتخاب میں مدینہ مسجد و کمیونٹی سنٹر کی بنیادوں سے از سرِ نو تعمیر ہو رہی ہے نوجوان نسل کو دین اسلام سے جوڑے رکھنے امن و محبت کا پیغام عام کرنے کے لیے ایسے مراکز کی اشد ضرورت ہے۔ مدینہ مسجد کے امام ظفر اقبال کا کہنا تھا کہ وہ پندرہ سال سے امامت کے فرائض سر انجام دے رہے ہیں ہمارے ہاں لگ بھگ دو ہزار افراد نماز ادا کرتے ہیں اور تین سو طلبا شام کی کلاسز میں قرآن ودین کی تعلیم حاصل کر رہے ہیں ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ نئ مسجد کی تعمیر مسلمانوں کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے کی جا رہی ہے اسکے علاوہ کمیونٹی کی سماجی سرگرمیوں کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے کمیونٹی سنٹر بھی مسجد کے ملحقہ تعمیر کیا جائے گا۔ یوکے اسلامک مشن برطانیہ و یورپ کے سینیئر نائب صدر میاں عبد الحق کا کہنا تھا کہ کمیونٹی نے مسجد کی تعمیر میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے ۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ اگر ہمیں اپنی نسلوں کو دین سے منسلک رکھنا ہے تو ہمیں مساجد کی تعمیر و توسیع بھی کرنی ہو گی۔ ڈاکٹر فصہ بی بی کا کہنا تھا کہ نوجوانوں کو دین اسلام سے جوڑے رکھنے کے لیے مساجد کا اہم کردار ہے ۔محبوب بٹ ، صبا ، مدثر شاہ، شجاعت حسین کا کہنا تھا کہ بیس سال بعد مسجد کی از سر نو تعمیر سے ثابت ہوتا ہے کہ مقامی سطح پر مسلمانوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور انتظامیہ نے کمیونٹی کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے مسجد کی توسیع کا منصوبہ بنایا ہے۔ چیریٹی ڈنر کے موقع پر جذبہ ایمانی سے سرشار خواتین و مرد حضرات نے دل کھول کر عطیات دیے.چیریٹی ڈنر میں شریک افراد کے لیے کھانے کے بعد محفل مشاعرہ کی خصوصی نشست بھی ہوئی۔