مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نے کمیونٹی کی خدمات کیلئے دن رات کوشش کی ہے:پیر ابو احمدمحمدمقصود مدنی
کونسلر محمد صادق نے دوسری بار میئر لندن بارو آف سٹن کا حلف اٹھالیا، کمیونٹی کی مبارکباد
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پلیک گیٹ ہا ئی سکول بلیک برن میں تعینات ٹیچر کیتھرین نے روزے رکھنے شروع کر دیے
مظلوم کے ساتھی ہو کہ ظالم کے طرفدار؟؟؟؟
پکچرگیلری
Advertisement
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
سٹوک آن ٹرینٹ(محمد فیاض بشیر)برطانوی اور یورپی ارکان پارلیمنٹ اور کشمیری رہنمائوں نے مقبوضہ کشمیر میں بگڑتی صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کرنے کا مطالبہ کیا جبکہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے کمشنر کی رپورٹ پر عملدرآمد ہونا چاہئے،برطانوی پارلیمنٹ کے کشمیر گروپ کی رپورٹ اور اگلے ہفتے یورپی پارلیمنٹ میں انسانی حقوق پر سماعت سے بھارتی افواج کے مظالم اور عالمی برادری کی طرف سے مسئلہ کشمیر کی طرف توجہ بیرون ملک کشمیریوں کی کاوشوں کا نتیجہ ہے برطانیہ اور یورپ کے ہر ایوان میں کشمیریوں کے دوست موجود ہیں جو بلا امتیاز سیاسی وابستگی حق خود ارادیت کے حصول تک ان کی جدو جہد میں معاونت جاری رکھیں گے،پاکستان اور بھارت مسئلہ کشمیر پر جلد از جلد مذاکرات کا آغاز کریں جن میں کشمیریوں کی شرکت کو بھی یقینی بنایا جائے،برطانیہ اور یورپ میں مقیم کشمیری اپنے مظلوم بہن بھائیوں کی آواز بن کر عالمی سطح پر ہر دروازہ کھٹکھٹائیں گے اور یورپ کے بعد جنیوا اور امریکہ میں اقوام متحدہ کے سامنے بھی بھرپور احتجاج کیا جائے گا اور کشمیر پر پاس قراردادوں پر عملدرآمد کیلئے جدوجہد تیز کی جائے گی۔ان خیالات کا اظہار مقررین نے جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام سٹوک آن ٹرینٹ میں پیپلز پارٹی کے صدر محمد نوید مغل کی معاونت سے منعقدہ کشمیر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے جس کی صدارت راجہ نجابت حسین نے کی جبکہ مہمان خصوصی آزاد کشمیر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یاسین تھے اس موقع پر یورپی پارلیمنٹ میں فرینڈز آف کشمیر کی چیئر پرسن انتھیا میکنٹائر برطانوی پارلیمنٹ میں قائم آل پارٹیز کشمیر گروپ کے سینئر وائس چیئرمین جیک بریئرٹن ایم پی،مقامی ممبران پارلیمنٹ روتھ سمیتھ ایم پی،گیرتھ سنیل،لیبر پارٹی کے پارلیمانی امیدوار مارک میکڈونلڈ ،رازق بھٹی،سابق لارڈ میئر چوہدری،کونسلر امجد وزیر،ہیری بوٹا،چوہدری محمد اکرم،چوہدری محمد صغیر پوٹھی،ڈاکٹر عبدالصبور جاوید اور دیگر رہنمائوں نے اظہار خیال کرتے ہوئے جہاں پلوامہ میں ہونیوالی دہشت گردی کی پرزور الفاظ میں مذمت کی اور اس واقعہ کی آڑ میں جموں اور وادی میں نہتے مسلمانوں پر ظلم و تشدد کی کارروائیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی اور بھارتی افواج کے مظالم کو بند کرانے کا مطالبہ کیا اور اس ساری صورت حال کو برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں اٹھانے کا بھی فیصلہ کیا گیا،سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی چوہدری محمد یاسین نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں اگر بھارتی مظالم سے تنگ آ کر لوگ آواز اٹھاتے ہیں تو بھارتی افواج گھروں میں گھس کر نوجوانوں کو شہید کر رہے ہیں اور عورتوں اور بچوں پر بھی تشدد کر رہے ہیں،مقبوضہ کشمیر کے عوام جس بہادری اور جرات سے اپنے وطن کی آزادی کیلئے جدوجہد کر رہے ہیں ہم ان کی آواز بن کر عالمی سطح پر کوششیں تیز کریں گے،انہوں نے ممبران پارلیمنٹ پر زور دیا کہ وہ اپنے اپنے ایوانوں میں کشمیریوں کا نکتہ نظر پیش کریں اور اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کروانے میں ماری معاونت کریں،انہوں نے برٹش کشمیریوں کی طرف سے لندن ،برسلز اور دنیا کے ہر دارالحکومت میں کشمیریوں کے حق میں مظاہرے کرنے اور ممبران پارلیمنٹ سے رابطوں پر خصوصی خراج تحسین پیش کیا اور اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا،جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے کہا کہ ہماری تنظیم نے ممبران پارلیمنٹ،آزاد کشمیر کے صدر،وزیر اعظم اور اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یاسین کے علاوہ برٹش کشمیریوں کے تعاون سے گزشتہ چند سالوں میں مسئلہ کشمیر پر متعدد کامیابیاں حاصل کی ہیں اور کشمیری عوام کے تمام حقوق ملنے تک اپنی جدو جہد جاری رکھیں گے اور آئندہ ہفتے میں برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورت حال سے ممبران پارلیمنٹ کو آگاہ کریں گے اور ان سے مطالبہ کریں گے کہ وہ اپنے اپنے ایوانوں میں بھارتی افواج کے مظالم بند کروانے کیلئے آواز بلند کریں۔