مقبول خبریں
نائجیریا کمیونٹی ایسوسی ایشن کا میئر چیئرٹی فنڈریزنگ ڈنر کا اہتمام ،مئیر کونسلر محمد زمان کی خصوصی شرکت
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
راجہ فاروق حیدر کا بیورو کریسی کے آلہ کار بننا عوام کی توہین ہے: راجہ آفتاب شریف
اولڈہم:مسلم لیگ ن ایک جمہوری جماعت ہے جو عوام اور اس کے نو منتخب کردہ نمائندوں پر یقین رکھتی ہے کہ وہ عوام کی فلاح و بہبود اور ملکی ترقی کیلئے اپنی پیشہ وارانہ صلاحیتوں پر انحصار کرتے ہوئے فرائض منصبی سر انجام دیں گے اور حقیقی عوامی نمائندے اپنے علاقہ کی عوام کے آگے جواب دہ ہوتے ہیں اسی وجہ سے وہ ان کے مسائل کو حل کروانے کیلئے قانونی طریقہ کار کے مطابق کردار ادا کرتے ہیں،آزاد کشمیر کے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان کافی عرصہ سے عوام کے منتخب نمائندوں اور قانون ساز اسمبلی کے ممبران کو نظر انداز کر کے بیورو کریسی کے آلہ کار بنے ہوئے ہیں جو کہ عوام کی توہین ہے انہیں تحفظات کا اظہار ہمارے محبوب قائد چوہدری طارق فاروق جو کہ ریاست کے سینئر وزیر اور منجھے ہوئے انتہائی تجربہ کار عوامی نمائندہ ہیں اور ان کی خدمت پر یقین رکھتے ہیں نے بھی کیا ہے اور اگر ایسا شخص وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر کے بارے تحفظات کا اظہار کرے تو ظاہر ہے کہ طرز حکمرانی عوامی اور حکومتی وزرا کی امنگوں کے منافی ہے،ان خیالات کا برملا اظہار مسلم لیگ ن برطانیہ کے چیئرمین سماجی و روحانی شخصیت راجہ آفتاب شریف نے کیا،ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم قائد میاں نواز شریف سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ حالات کی نزاکت کو مد نظر رکھتے ہوئے مداخلت کریں اور تمام حل طلب معاملات کا از خود نوٹس لیں اور اگر آزاد کشمیر میں تبدیلی نا گزیر ہے تو پھر کسی اور کو ریاست کشمیر کی عوام کا خدمت کا موقع دیں اور اگر ایسا نہ ہوا تو پھر جماعت کو مجموعی طور پر نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے اور بحیثیت کارکن ہم اس بات کے متحمل نہیں ہو سکتے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر