مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
گلوبل پیس اینڈیونٹی فیسٹیول لندن،معروف مسلم شخصیات کی شرکت، ڈاکٹرطاہرالقادری کاخطاب
لندن ... ڈاکٹر طاہر القادری نے مغرب کو متنبہ کیا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف عالمی اتحاد کے نام پر بے گناہوں کو مارنے کا سلسلہ بند ہونا چاہیے جبکہ اسلام کے نام پر اگر کوئی گروپ یا تنظیم دنیا کے کسی بھی حصے میں دہشت گردی یاانتہا پسندی کی ذمہ دار ہے تو ان کا یہ فعل نہ صرف خلاف اسلام ہے بلکہ انسانیت کی تذلیل بھی ہے ان جرائم کے ذمہ دار پیشہ ورمجرموں کو سزا ملنی چاہیے لیکن ان مجرموں کے غیر اسلامی فعل کی بنیاد پر بے گناہوں پر مظالم کا سلسلہ بند ہونا چاہیے امت مسلمہ کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی نوجوان نسل کو ان انتہا پسندوں اور دینی تعلیم کے باغیوں سے حضوراکرم کی تعلیماتی پر عمل پیرا ہو کرا تحفظ فراہم کرے ۔ان خیالات کا اظہارمنہاج القرآن انٹرنیشنل کے سربراہ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے لندن کے وسیع و عریض ایکسل سنٹر میں منعقدہ دو روزہ دی گلوبل پیس اینڈ یونٹی فیسٹیول کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔فیسٹیول میں دنیا بھر سے معروف مذہبی سکالرز،سیاسی،سماجی اورصحافتی شخصیات نے بھی شرکت کی جبکہ معروف عالمی قراء اور نعت خوانوں نے بھی اپنے فن کا مظاہرہ کیا ۔فیسٹول کا اہتمام اسلام چینل نے کیا تھا جس کے چیف ایگزیکٹو محمد علی نے اپنے خطاب میں کہا کہ برطانیہ میں رہنے والے مسلمانوں کیلئے اسلامی حدود کے متعدد تفریحی پروگرام اس فیسٹول کا حصہ ہیں، ہم دنیا کو امن، محبت اور بھائی چارے کا پیغام دینا چاہتے ہیں۔اس امن میلے میں پاکستان سے بھی معروف شخصیات نے شرکت کی جن میں نجم شیراز اور جنید جمشید کو بہت پزیرائی ملی۔ ڈاکٹر محمد طاہر القادری کا سٹیج پر آمد کے وقت شرکاء نے کھڑے ہو کر پر تپاک استقبال کیاانھوں نے اپنے خطاب میں کہاکہ بد قسمتی سے مجرموں کے کرتوتوں کو اسلام اور مسلمانوں کے ساتھ نتھی کر دیا گیا ہے جبکہ حقیقت میں اسلام کی تعلیمات ان تمام اقدامات کی نفی کرتی ہیں جنھیں بنیاد بنا کر شر پسند عناصر اپنے جرائم کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے اسلام کا لبادہ اوڑے ہوئے ہیں ان نے کہا کہ ہمارے نبی اکرمؐ محض مسلمانوں کے لیے ہی نہیں بلکہ کائنات کے تمام طبقات کے رحمت اللعالمینؐ بن کر آئے تھے جنھوں نے ہمیشہ انسانیت سے محبت اور احترام کی تعلیم دی ہے انھوں نے کہا کہ امت مسلمہ کی اکثریت انتہا پسندی اور دہشت گردی کی نہ صرف مذمت کرتی ہے بلکہ ان اقدامات کو اسلام کی تعلیمات کے سراسر خلاف سمجھتی ہے ڈاکٹر طاہر القادری نے مزید کہا کہ آج امت مسلمہ کی نوجوان نسل کی شناخت،ثقافت،نظریات و میراث کھو چکی ہے جس کو پانے کے لیے اسلام کی ان حقیقی تعلیمات پر عمل پیرا ہونے کی ضرورت ہے جو حضور اکرم کے ذریعے ہم تک پہنچی ہیں جن کے مطابق اسلام امن و محبت اور برداشت کا مذہب ہے جس کا انتہا پسندی اور دہشت گردی سے دور کا بھی تعلق نہیں ہے امت مسلمہ کی اکثریت انسانیت کا احترام اور محبت کرنے پر یقین رکھتی ہے انھوں نے کہا کہ مسلمان دنیا کے جس خطے میں بھی آباد ہیں وہ اپنے کردار سے پرامن معاشرے کے قیام میں اپنا مثبت کردار ادا کریں۔ اس فیسٹول کیلئے رجا کاروں نے موبائل اپلی کیشن بھی متعارف کرارکھی تھی جسے داؤ ن لوڈ کر کے اس کے ہر مقرر ، نعت خواں اور اہم شخصیت کی مکمل معلومات حاصل کی جا سکتی تھیں۔ایک موقع پر ایک کامیڈین نے برملا یہ بھی کہہ دیا کہ دو دن سے متعدد خاندان یہاں اکٹھے ہورہے ہیں امید ہیں بہت سے رشتے استوار ہونے جا رہے ہوں گے جس پر ہال میں موجود نوجوانوں نے اپنی بھرپور خوشی کا اظہار کیا۔